تفتیش مکمل کئے بغیر نان کسٹم پیڈ گاڑی اصل مالک کے حوالے نہیں کی جا سکتی، ہائیکورٹ 

تفتیش مکمل کئے بغیر نان کسٹم پیڈ گاڑی اصل مالک کے حوالے نہیں کی جا سکتی، ...

  

ملتان(خصوصی رپورٹر)لاہور ہائیکورٹ نے قراردیاہے کہ تفتیش مکمل کئے بغیر نان کسٹم پیڈ گاڑی اصل مالک کے حوالے نہیں کی جاسکتی،تفتیش مکمل ہونے کے بعد گاڑی کو اصل مالک کے حوالے کیا جا سکتا ہے،مسٹرجسٹس محمد امجدرفیق نے زمان کی درخواست پر تحریری فیصلہ جاری کردیاہے،عدالتی تحریری فیصلے میں نان کسٹم پیڈ گاڑیوں سے متعلق کیس میں فیصلہ جاری کرتے ہوئے تفتیش مکمل کئے بغیر نان کسٹم پیڈ گاڑی(بقیہ نمبر45صفحہ7پر)

 شہری کو سپرداری پر دینے سے متعلق سیشن کورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دے دیاگیاہے،عدالتی فیصلے میں مزید کہا گیاہے کہ تفتیش مکمل کئے بغیر نان کسٹم پیڈ گاڑیوں کی سپرداری دینا سپیشل ججز اور مجسٹریٹ کے پاس اختیار نہیں ہے، درخواست گزار بارڈر ملٹری پولیس کا ملازم ہے اور ناکے پر گاڑی کو روکا،درخواست گزار نے دوران ڈیوٹی شہری کی گاڑی کو روکا اور کسٹم حکام کو گاڑی کے خلاف کارروائی کے لئے آگاہ کیا،کسٹم حکام نے ابھی کارروائی نہیں کی بلکہ شہری نے ایڈیشنل سیشن جج سے گاڑی سپرداری کروا لی،درخواست گزار نے ایڈیشنل سیشن جج کے اقدام کو ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا،درخواست گزار نے دوران ڈیوٹی اپنی ایمانداری کے ساتھ ڈیوٹی پرفارم کی،ایڈیشنل سیشن جج نے حقائق کے برعکس گاڑی واپس کرنے کا حکم کیا ہے،پولیس کی انکوائری اور تفتیشی رپورٹ مکمل ہونے تک گاڑی کی سپرداری نہیں کی جاسکتی۔

نان کسٹم گاڑی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -