پنجاب میں ہر سال 2ما رچ کو نرسنگ ڈے منانے کا اعلان، ماہانہ وظیفہ 31,470کر دیا: عثما ن بزدار

پنجاب میں ہر سال 2ما رچ کو نرسنگ ڈے منانے کا اعلان، ماہانہ وظیفہ 31,470کر دیا: ...

  

     لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے کہا ہے کہ  نرسنگ کنونشن کے موقع پر تمام نرسوں کوان کی خدمات پر سلام پیش کرتا ہوں۔نرسنگ ایسا شعبہ ہے جسے جتنا بھی سراہا جائے کم ہے  کسی بیمار کی مدد، دلجوئی اور علاج عبادت کے مترادف ہے دکھی انسانیت کی خدمت میں نرسوں کے کردار کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔نرسوں کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ پہلی مرتبہ پنجاب میں نرسنگ کنونشن کا انعقاد کر کے نرسوں کی خدمات کااعتراف کیا گیا ہے-پنجاب بھر میں نرسنگ سے وابستہ افراد کے لیے خصوصی اقدامات کی جا رہے ہیں -وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے 28 نرسنگ کالجوں کو اڑھائی ارب روپے کے ترقیاتی فنڈزدینے اورپسماندہ علاقوں کے امیدواروں کو نرسنگ کے شعبہ میں داخلے کے لئے خصوصی کوٹہ دینے کا اعلان کیا۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ پنجاب میں ہر سال سرکاری طورپر 2مارچ کو نرسنگ ڈے منایا جائے گا۔وہپنجاب کے پہلے نرسنگ کنونشن 2022 سے خطاب کررہے تھے۔انہوں نے کہاکہ 44 سکولوں کو نرسنگ کالج کے طور پر اپ گریڈکر کے بی ایس نرسنگ ڈگری پروگرام کا آغازکیا گیا ہے۔نرسنگ طلبہ کے لیے ماہانہ وظیفہ 20,171 روپے سے بڑھاکر 31,470 روپے کیا ہے - نرسنگ انسٹرکٹرز، ڈپٹی نرسنگ سپرنٹنڈ نٹ اور کلینیکل انسٹرکٹرز کو گریڈ 17 سے ترقی دیکر گریڈ 18 دیا ہے - لاہور اور چکوال کے 2 پبلک ہیلتھ نرسنگ سکولوں کی بی ایس مڈوائفری پروگرام میں اپ گریڈیشن کی جارہی ہے- ساڑھے تین سال میں نرسنگ سٹاف کی مجموعی طور پر 10 ہزار سے زائد نئی بھرتیاں کی گئیں اور ترقی بھی دی گئی-انہوں نے کہا کہ 48ہزار ڈاکٹرز،نرسز اوردیگر سٹاف کو بھرتی کیاگیا ہے جبکہ1لاکھ30ہزار آسامیوں پر بھرتی کا عمل جاری ہے۔شاہدرہ ٹیچنگ ہسپتال لاہور میں Maleنرسنگ کالج قائم کیا گیا ہے اور پہلی بار پی آئی ٹی بی کے تعاون سے نرسنگ پروگرام کے داخلوں کا آن لائن نظام متعارف کیا گیا ہے۔ حکومت پنجاب نے 16نرسنگ کالجوں کا میڈیکل یونیورسٹیوں کے ساتھ الحاق کا عمل مکمل کر لیا ہے- انہوں نے کہا کہ نرسنگ کے شعبے سے وابستہ لوگ بلاامتیاز انسانیت کی خدمت کرتے ہیں اور کوروناو باء کے دوران نرسوں نے قابل تحسین کردار ادا کیاہے -کورونا وباء کے دوران ڈاکٹروں، نرسوں اور پیرا میڈیکل سٹاف نے مثالی انداز میں خدمات سرانجام دیں - ہمارے ڈاکٹروں،نرسوں اورپیرا میڈیکل سٹاف نے کورونا کے خلاف بھرپور جنگ لڑی ہے اورپوری  دنیا اس کی گواہ ہے کہ پاکستان نے کورونا کے خلاف سب سے زیادہ موثر انداز سے اقدامات کیے ہیں۔وزیراعلیٰ نے بتایا کہ صحت کے مختلف شعبوں کے لیے 403 ارب روپے سے زائد کا تاریخی بجٹ مختص کیا گیا ہے۔صوبہ بھر میں 8 سٹیٹ آف دی آرٹ مدر اینڈ چائلڈ ہسپتالوں کی تعمیر جاری ہے اور مزید 23 نئے سرکاری ہسپتال بنائے جارہے ہیں۔ پنجاب کے  3کروڑ خاندانوں کو نیا پاکستان قومی صحت کارڈ کی فراہمی کیلئے 400ارب روپے کی خطیر رقم مختص کی گئی ہے۔ پنجاب بھر کی آبادی پرائیویٹ اور سرکاری ہسپتالوں میں 10لاکھ روپے سالانہ تک معیاری طبی سہولیات سے استفادہ کر سکیں گے۔ 7 ڈویژنوں میں نیا پاکستان قومی صحت کارڈ پراجیکٹ شروع ہو چکا ہے اورپنجاب کی تقریبا 73 فیصد سے زائد آبادی اس سے مستفید ہو رہی ہے- مارچ کے آخر تک پنجاب کی پوری آبادی سالانہ 10لاکھ روپے کے مفت علاج سے مستفید ہوگی۔انہوں نے کہا کہ سابق حکومت نے نرسنگ کے شعبہ پر توجہ نہیں دی جبکہ ہماری حکومت نے نرسنگ کے شعبہ پر فوکس کیا ہے اورنرسوں کو ان کا حق دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سابق حکومت سے دوگنازائد بجٹ شعبہ صحت کے لئے دیا ہے۔پنجاب کو صحت کے حوالے سے مثالی صوبہ بنائیں گے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے مختلف اضلاع میں نرسنگ کالجز کی اپ گریڈیشن کے حوالے سے سرٹیفکیٹ کالجز کی پرنسپلز کو دیئے۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشداورسیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن نے بھی کنونشن سے خطاب کیا۔ترجمان پنجاب حکومت حسان خاور،پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ،سیکرٹری پرائمری و سکینڈری ہیلتھ،سیکرٹری اطلاعات،وائس چانسلرز،نرسنگ سٹاف  اورمتعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجو د تھے۔

عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -