ایڈہاک ڈاکٹرز کا مطالبات کے حل کیلئے دھرنا اور واک 

  ایڈہاک ڈاکٹرز کا مطالبات کے حل کیلئے دھرنا اور واک 

  

پشاور(سٹی رپورٹر)ایڈہاک  میڈیکل افیسرز ایسوسی ایشن خیبر پختونخوا کا اپنے مطالبات کے حق میں صوبائی اسمبلی کے سامنے دھرنا جاری ہے  جبکہ ایڈہاک ڈاکٹرز نے اس سلسلے میں صوبائی اسمبلی سے پشاور پریس کلب تک احتجاجی  واک کیا اور اپنا احتجاج ریکارڈ کر کے واپس صوبائی اسمبلی چوک روانہ ہوئے مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے جس پر انکے حق میں مطالبات درج تھے اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ ہمیں اپریل 2020 میں بھرتی کیا گیا اور اب دو سال ہونے کو ہیں اور تاحال مستقل نہیں کیا گیا ہیں، حکومت کی بار بار یقین دہانی کے باوجود بھی ملازمت کی مستقلی عمل میں نہیں لائی جا رہی جو کہ انتہائی افسوس ناک ہے  جسکی وجہ سے زیادہ تر ڈاکٹرز او ایج ہو چکے ہیں انہوں نے کہا کہ 800ڈاکٹرز مستقل نہ ہونے کے باعث انکا مستقبل داؤ پر لگ چکا ہے  انہوں نے کہا کہ دوسرے ممالک میں کرونا سے لڑنے والے ہیلتھ ملازمین کو نوازا جا رہا ہیں اور ہمیں نوزنے کی بجائے  اپنے ہی حقوق سے محروم کیا جا رہا ہیں جو افسوس ناک ہے ایڈہاک ڈاکٹرز نے عندیہ دیا ہے کہ مستقلی تک صوبے کے ایڈہاک ڈاکٹرزپولیو، کرونا، خسرہ ہر قسم کی ڈیوٹیوں اور قومی اور مہام سمیت او پی ڈی سروسز سے بھی مکمل طور پر بائیکاٹ پر  ہونگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -