پاکستان صحافیوں کیلئے گذشتہ سال کی نسبت زیادہ خطرناک ملک بن گیا

پاکستان صحافیوں کیلئے گذشتہ سال کی نسبت زیادہ خطرناک ملک بن گیا
پاکستان صحافیوں کیلئے گذشتہ سال کی نسبت زیادہ خطرناک ملک بن گیا

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) صحافیوں کے تحفظ کے عالمی ادارے نے بتایاکہ پاکستان میں صحافیوں کی جان کو لاحق خطرات میں اضافہ ہوگیاہے اور خطرناک ممالک کی فہرست میں اسلام آباد دسویں سے آٹھویں نمبر پر آگیاہے ۔ صحافیوں کے تحفظ کے عالمی ادارے ”کمیٹی ٹو پروٹیکٹ جرنلسٹس“ کی نئی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان گذشتہ سال اسی فہرست میں دسویں نمبر پر تھا لیکن ملک میں صحافیوں کے لیے بڑھتے ہوئے خطرات اور ان کی ہلاکتوں کے باعث اس مرتبہ پاکستان آٹھویں نمبر پر آگیا ہے۔کہا گیا ہے کہ گزشتہ برسوں میں صحافیوں کے قتل میں ملوث کسی ایک فرد کو بھی سزا نہیں دی جا سکی جو باعثِ تشویش ہے۔ رپورٹ میں 2011 میں قتل ہونے والے جیو نیوز کے رپورٹر ولی بابر کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ اس کیس کے تمام گواہوں کو بھی مار دیا گیا۔رپورٹ کے مطابق پاکستانی صحافیوں کو دہشت گردوں کے ساتھ ساتھ سیکیورٹی اداروں اور حکومت سے بھی دھمکیاں ملتی ہیں۔ادارے کی فہرست میں صحافیوں کے لیے خطرناک ترین عراق کو قرار دیا گیا۔اس فہرست میں بھارت کا 12واں نمبر رکھا گیا ہے۔

مزید :

انسانی حقوق -