ثناءاللہ کی حالت تشویشناک ، سفارتی رسائی کی اجازت، زخمی کو علاج کیلئے پاکستان کے حوالے کرنے کا مطالبہ

ثناءاللہ کی حالت تشویشناک ، سفارتی رسائی کی اجازت، زخمی کو علاج کیلئے ...
ثناءاللہ کی حالت تشویشناک ، سفارتی رسائی کی اجازت، زخمی کو علاج کیلئے پاکستان کے حوالے کرنے کا مطالبہ

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جیل میں تشدد کا نشانہ بننے والے پاکستانی قیدی ثنا ءاللہ کی حالت تشویشناک بیان کی جاتی ہے جس کی تصدیق بھارتی میں پاکستانی ہائی کمشنر سلمان بشیر نے کردی ہے جبکہ بھارت نے پاکستان کوثناءاللہ تک سفارتی رسائی کی اجازت دیدی ہے ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق ثناءاللہ کا علاج جاری ہے مگر اس کی حالت بہتر نہیں ہے ۔ ثنا اللہ پر جیل میں کلہاریے کے شدید وار کئے گئے ہیں اوتر موت و حیات کی کشمکش میں ہے ۔ پاکستانی میڈیا کے مطابق پاکستان نے مقبوضہ کشمیر میں پاکستانی قیدی ثنااللہ کو ساتھی قیدیوں کی جانب سے زخمی کئے جانے کے معاملے پر بھارت سے شدید احتجاج کرتے ہوئے قیدی کو علاج کے لئے پاکستان منتقل کرنے اور حملہ آور کو کیفرکردار تک پہنچانے کا مطالبہ کیا ہے۔ دفتر خارجہ کے ترجمان معظم علی خان نے پریس بریفنگ کے دوران کہا کہ ہم کشمیر کی جیل کوٹ بھلوال میں پاکستانی قیدی ثنا اللہ کو زخمی کئے جانے کے واقعے کی سخت مذ مت کرتے ہیں اور ہم نے بھارتی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ واقعے کی مکمل تحقیقات کرائی جائیں اور حملے میں ملوث افراد کو کیفرکردار تک پہنچایا جائے۔ترجمان نے کہا کہ بظاہر یہ واقعہ سربجیت سنگھ والے معاملے کا ردعمل محسوس ہوتا ہے اور ہم امید کرتے ہیں کہ بھارتی حکومت بھی ثنااللہ کے حوالے سے بھی اتنا ہی تعاون کرے گی جتنا پاکستان نے سر بجیت کے معاملے پرکیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم چاہتے ہیں کہ ثنااللہ کو علاج کے لئے پاکستان بھیجا جائے، دونوں ممالک کے درمیان قیدیوں کے معاملے پر کونسلر معاہدہ، سیکریٹری داخلہ کے درمیان مذاکرات اور عدالتی کمیشن اہم کڑیاں ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان چاہتا ہے کہ دونوں ممالک کے تعلقات خوش اسلوبی سے آگے بڑھتے رہیں۔

مزید :

اسلام آباد -اہم خبریں -