پاکستان اور ملائیشیا کے مابین تجارت کے وسیع مواقع موجو دہیں ‘ سید حسن رضا

پاکستان اور ملائیشیا کے مابین تجارت کے وسیع مواقع موجو دہیں ‘ سید حسن رضا

  



راولپنڈی ( نیت نیوز) ملائیشیا میں تعینات پاکستان کے ہائی کمشنر سید حسن رضا نے کہا ہے کہ پاکستان اور ملائیشیا کے مابین تجارت کے وسیع مواقع موجو دہیں لیکن ماضی میں دونوں ممالک کی طرف سے تعلقات کو بہتر بنانے کی کوشش نہیں کی گئی ،حلال فوڈز سرٹیفیکیشن ، برانڈنگ اور ویلیو ایڈیشن کے شعبوں میں خاطر خواہ ترقی نہ کرنے کے باعث ملک کی مجموعی برآمدات متاثر ہو رہی ہیں ،ملائیشیا میں پاکستانی مصنوعات جیسے کنو، آم، ٹیکسٹائل ، چاﺅل ، فرنیچر وغیرہ کی بہت مانگ ہے ، راولپنڈی چیمبر ملکی مصنوعات کو دنیا کے کونے کونے میں متعارف کروانے میں اپنا بھر پور کردار ادا کررہا ہے اور چیمبر آنے کا مقصد ملائیشیا کی تجارتی منڈی کو ایکسپلور کرنے کے لئے مقامی کاروباری برادری کا ایسا وفد تیار کرنا ہے جو صیحح معنوں میں وہاں کی تجارتی منڈی کی افادیت کو سمجھ سکے اور ملک کی ترقی میں اہم کردار ادا کرسکے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے راولپنڈی چیمبر کے دورے کے دوران صدر چیمبر ڈاکٹر شمائل داﺅد آرائیں کے ساتھ ایک ملاقات میں کیا اس موقع پر نائب صدر محمد عالم چغتائی ، چیئرمین قائمہ کمیٹی فارن افیئرز راجہ عامر اقبال، رکین مجلس عاملہ چوہدری جمیل اور دیگر بھی موجو دتھے۔ہائی کمشنر نے کہا کہ جمز اینڈ جیولری کی صنعت ملائیشیا میں تیزی سے پھیل رہی ہے لیکن اُس مارکیٹ کو حاصل کرنے کے لئے روایتی طور طریقوں کی بجائے جدید ترین ٹیکنالوجی کو استعمال کرنے کی ضرورت ہے اور خاص طور پر ڈیزائننگ کے شعبے پر بھرپور توجہ سے ہی مطلوبہ نتائج حاصل کئے جا سکتے ہیں ،انہوں نے راولپنڈی چیمبر کی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کیا اور ملائیشیا میں یک ملکی نمائش کے حوالے سے اپنے بھرپور تعاون کا یقین بھی دلایا ۔

اس سے قبل صدر چیمبر ڈاکٹر شمائل داﺅد آرائیں نے اپنے خطاب میں معزز سفیر کو راولپنڈی چیمبر اور چیمبر سرگرمیوں کے بارے میں تفصیل سے آگاہ کیا اور دونوں ممالک کی باہمی تجارت کے فروغ کے حوالے سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور ملائیشیا کا موجودہ تجارتی حجم 1.95بلین ڈالر ہے جس میں بہتری کی کافی گنجائش موجو دہے ،حکومت کو چاہیے کہ وہ ملائیشیا کے ساتھ تعلقات کے نئے دور کا آغاز کرے کیونکہ ملائیشیا کی تجارتی منڈی تک رسائی کا مطلب ہے آسیان ممالک کے ساتھ تعلقات کا فروغ اور جس سے ملکی اقتصادی ترقی میں انقلاب لایا جا سکتا ہے ۔

کاروباری برادری حکومت کے ہر اچھے اقدام کی بھرپور سپورٹ جاری رکھے گی اور غلطیوں پر نتقید بھی کرے گی، انہوں نے کمرشل قونصلرز کے کردار کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے معزز سفیر سے اپیل کی کہ ملائیشیا میں موجود کمرشل قونصلر کو فعال بنانے کے لئے واضح حکمت عملی ترتیب دیں تا کہ مزید پاکستانی مصنوعات جیسے ماربل اور لائیو سٹاک

مزید : کامرس