وطن عزیز کے تحفظ کیلئے خارجہ پالیسی مضبوط بنائی جائے،مولانا احمد لدھیانوی

وطن عزیز کے تحفظ کیلئے خارجہ پالیسی مضبوط بنائی جائے،مولانا احمد لدھیانوی

  



لاہور(سٹاف رپورٹر)اہلسنت والجماعت کے سربراہ علامہ محمد احمدلدھیانوی نے کہا ہے کہ وطن عزیز کے تحفظ کے لیے حکومت خارجہ پالیسی مضبوط بنائے،پڑوسی ممالک کی مداخلت دہشت گردی اور تخریب کاری کی اہم وجہ ہے،مذاکرات پر حکومت فوج کے ایک پیج پر نہ ہونے کی افواہیں مایوس کن ہے،دینی مدارس کا دہشت گردی سے کوئی تعلق نہیں ،امریکی رپورٹ کو مسترد کرتے ہیں،افغانستان،بھارت اور ایران امریکی سرپرستی میں پاکستان میں مداخلت کررہے ہیں،لوڈشیدنگ نے عوام کاجینا محال بنادیاہے۔ان خیالات کا اظہار انہوںنے مرکز اہلسنت میں جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا،انہوں نے کہاکہ پاکستان نے امریکی جنگ میں اپنے ملک اور قوم کو آگ میں دھکیل دیا ہے ،تاہم امریکہ پاکستان کے خلاف بھارت اور افغانستان کو سپورٹ کررہاہے،حکومت کو چاہیے کہ امریکی مفادات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے ملک و قوم کے مفاد میں اپنی خارجہ پالیسی از سر نو مرتب کرے،امریکہ افغان جنگ کو پاکستان میں منتقل کرنا چاہتاہے۔

،ملک کے دینی مدارس امن کادرس دیتے ہیں،کسی قسم کی دہشت گردی اور تخریب کاری سے کوئی تعلق نہیں،مدارس کا دہشت گردی میں ملوث ہونے کی امریکی رپورٹ کو مسترد کرتے ہیں،مذاکرات کے حوالے سے حکومت فوج کا ایک پیج پر نہ ہونے کی خبریں مایوس کن ہیں،ضرور ت ہے کہ ملک کے تمام ادارے ایک ہوکر ملک و قوم کے لیے بہتر فیصلے کریں ،حکومت و فوج میں باہمی تضادات کی خبروں سے قوم میں مایوسی بڑھ رہی ہے ،وزیراعظم حکومت فوج کو ایک پیج پر لانے میں کردار ادا کریں،علامہ لدھیانوی نے کہاکہ سخت ترین گرمی میں لوڈشیڈنگ نے عوام کاجینا مشکل کردیا ہے،الیکشن سے قبل قوم سے کیے گئے وعدے پورے ہوتے دکھائی نہیں دے رہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...