سنار نےبھی سمندری بلا دیکھ لی

سنار نےبھی سمندری بلا دیکھ لی
 سنار نےبھی سمندری بلا دیکھ لی

  



ایڈنبرا (بیورورپورٹ) سکاٹ ینڈ کی ”لاک پٹس“ نامی جھیل کے متعلق مشہور ہے کہ اس میں ایک دیو ہیکل سمندری بلا پائی جاتی ہے جو کہ کبھی کبھار جھیل کی سطح سے باہر سر نکال کر پڑی ہوئی بھی دیکھی گئی ہے۔ جہاں اس کہانی کو غلط کہنے والوں کی کمی نہیں وہیں آئے روز اس کی حقانیت کے بارے میں بھی خبریں آتی رہتی ہیں۔ ابھی دو ہفتے قبل ہی ایپل کمپنی کے نقشہ جات سے متعلق ایک سافٹ ویئر کے ذریعے اس کی موجودگی کے شواہد ملے تھے کہ اب ”جیکوبائٹ کروزز“  نامی کمپنی کے ایک بحری جہاز پر نصب  سنار (سمندری ریڈار ) نے بھی اس کی موجودگی کے متعلق کچھ شواہد فراہم کردئیے ہیں۔ ان تازہ ترین تصاویر میں پانی کے نیچے انتہائی گہرائی میں ایک دیوہیکل جانور کو حرکت کرتے دیکھا جاسکتا ہے۔ اس سمندری بلا کے متعلق دنیا بھر کے لوگ دلچسپی رکھتے ہیں اور اس کی حقیقت جاننے کیلئے بے تاب رہتے ہیں۔ 1934ء سے لے کر ابتک اس کی موجودگی کے متعلق بے شمار شواہد پیش کئے گئے ہیں لیکن ابھی تک ان میں سے کسی کو بھی غیر متنازع حقیقت تسلیم نہیں کیا گیا ہے۔

مزید : سائنس اور ٹیکنالوجی