پنجاب میں تعلیم کے شعبہ میں برطانیہ بھر پور تعاؤن کررہاہے ، فلپ بارٹن

پنجاب میں تعلیم کے شعبہ میں برطانیہ بھر پور تعاؤن کررہاہے ، فلپ بارٹن

  



لندن(سہیل چوہدری ) پاکستان میں برطانیہ کے ہائی کمشنر فلپ بارٹن نے کہا کہ برطانیہ وزیراعظم محمد نوازشریف کی حکومت کی معاشی ،داخلہ و خارجہ پالیسیوں اور اصلاحاتی ایجنڈے کی مکمل حمایت کرتاہے اور ہم پاکستان میں جاری جمہوری عمل کی بھر پور حمایت کرنے کے ساتھ ساتھ پاکستانی عوام اور رہنماؤں کو سیلیوٹ کرتے ہیں ،جنہوں نے ملکی تاریخ میں پہلی بار پر امن جمہوری انتقال اقتدار کو ممکن بنایا ،وہ گزشتہ روز لاہور نالج پارک کے ’’چرچل ‘‘ہوٹل میں منعقدہ ’’روڈ شو‘‘سے خطاب کررہے تھے ،انہوں نے کہا کہ برطانیہ وزیراعظم محمد نوازشریف کی معاشی اصلاحات بشمول نجکاری ،اقتصادی پروگرام اور بزنس فرینڈلی رویہ کی بھر پور حمایت کرتاہے ،برطانوی ہائی کمشنر نے کہا کہ اگرچہ پاکستان کو سیکورٹی چیلنجز درپیش ہیں لیکن موجودہ حکومت ان چیلنجز سے نبرد آزما ہے اور برطانیہ پاکستان کی داخلی سلامتی پالیسی کی بھی حمایت کرتاہے اسی طرح برطانیہ پاکستان کے اپنے ہمسایہ ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات اپنانے اور انہیں مستحکم کرنے کے اقدامات کی بھی حمایت کرتاہے ،فلپ بارٹن نے کہا کہ برطانیہ پاکستان کے اپنے ہمسایہ ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات اپنانے اور انہیں مستحکم کرنے کے اقدامات کی بھی حمایت کرتاہے ،فلپ بارٹن نے کہا کہ برطانیہ اور پاکستان کے مابین تاریخی رشتہ ہے جبکہ لاہور نالج پارک منصوبہ برطانیہ اور پاکستان کے تعلقات کے روشن مستقبل کے حوالے سے اہم سنگ میل ہے ۔برطانیہ ہائی کمشنر نے کہا کہ پنجاب اگر ملک ہو تو دنیا کا بارہواں بڑا ملک ہوسکتاہے ،اس لئے پنجاب میں تعلیم کے شعبہ میں برطانیہ بھر پور تعاؤن کررہاہے ،انہوں نے کہا کہ برٹش کونسل اور ڈیفڈ دونوں ادارے پنجاب حکومت سے تعلیم کے شعبہ میں تعاؤن کرینگے ،انہوں نے بتایا کہ ان کے نانا دوسری جنگ عظیم کے بعد متحدہ ہندوستان میں پنجاب رجمنٹ میں تھے اور پاکستان کے علاقہ میں خدمات انجام دیتے رہے ان کی والدہ بھی پاکستان کے علاقہ میں مقیم رہی جبکہ وہ خود 1994کے بعد پاکستان چار ماہ قبل آئے اور جب انہوں نے لاہور کا دورہ کیا تو وہ حیران ہوگئے کہ وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کی وجہ سے لاہور ٹرانسفارم ہوگیا ہے انہوں نے کہا کہ وہ اعتماد کے ساتھ کہہ سکتے ہیں کہ برطانیہ تعلیم کے شعبہ میں اپنی مدد کے نتائج دیکھنا چاہے تو وہ پنجاب میں دیکھے جاسکتے ہیں ۔

مزید : صفحہ اول


loading...