لاہور ہائیکورٹ ، خاتون پروفیسر کی برطرفی کیخلاف درخواست پر نیشنل کالج آف آرٹس اور وفاقی حکومت سے جواب طلب

لاہور ہائیکورٹ ، خاتون پروفیسر کی برطرفی کیخلاف درخواست پر نیشنل کالج آف ...

  



لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے خاتون اسسٹنٹ پروفیسر کو بلاجواز ملازمت سے برطرف کرنے کیخلاف درخواست پر نیشنل کالج آف آرٹس اور وفاقی حکومت سے19مئی تک جواب طلب کر لیا۔جسٹس محمد امیر بھٹی نے برطرف اسسٹنٹ پروفیسر ثمینہ ضیاءشیخ کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ 1999ءمیں نیشنل کالج آف آرٹس میں کنٹریکٹ پر ملازمت شروع کی۔ انہیں اکثر اوقات ایوارڈز کے ساتھ بھی نوازا گیامگر کالج انتظامیہ نے 2008ءمیں انہیں مستقل کرنے کی بجائے ملازمت سے برطرف کر دیا۔ابتدائل دلائل کے بعد عدالت نے نیشنل کالج آف آرٹس اور وفاقی حکومت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 19مئی تک جواب طلب کر لیاہے۔

جواب طلب

مزید : صفحہ آخر