وزیر اعلیٰ وہ قیادت مہیا نہیں کر سکے جسکی پنجاب کو ضرورت ہے، منظور وٹو

وزیر اعلیٰ وہ قیادت مہیا نہیں کر سکے جسکی پنجاب کو ضرورت ہے، منظور وٹو

  



لاہور( سپیشل رپورٹر)پنجاب کے وزیر اعلیٰ کو پاکستان کا وزیر خارجہ بنا دینا چاہیے کیونکہ انکا زیادہ تر وقت صوبے کو چلانے کی بجائے غیر ملکی دوروں پر صرف ہو رہا ہے۔صوبہ پنجاب کو اپنے بچوں کے رحم و کر م پر چھوڑ دینا کسی لحاظ سے بھی مناسب نہیں ہے۔ یہ بات پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظو ر احمد وٹو نے پارٹی سیکر ٹریٹ سے جاری بیان میں کہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ صوبہ پنجاب پاکستان کا تقریباً 62فیصد ہے اس لیے اس کو ایک فل ٹائم وزیر اعلیٰ کی ضرورت ہے۔ موجودہ وزیر اعلیٰ صوبے کو وہ قیادت مہیا نہیں کر سکاجسکی صوبے کو ضرورت ہے کیونکہ انکی پارٹی کے اراکین اسمبلی بھی ان سے تنگ ہیں کیونکہ وہ شاید ہی انکے حلقوں کے ترقیاتی کاموں میں ان سے مشاورت کرتے ہونگے۔انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعلیٰ کا بحیثیت قائد ایوان کردار قابل رشک نہیں ہے کیونکہ وہ کبھی کبھار ہی اسمبلی میں تشریف لاتے ہیں جو انکی پارلیمانی روایات کی پاسداری کا مظہر ہیں ۔ستم ظریفی یہ ہے کہ انکی پارٹی کے اراکین اسمبلی بھی ان سے ملنے سے کتراتے ہیں جو کہ صوبے کے لیے ٹھیک نہیں ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ وزیراعلیٰ شہباز شریف کی وزارت اعلیٰ صرف فیروزپور روڈ تک ہی محدود نظر آتی ہے ۔

وٹو

مزید : صفحہ آخر


loading...