لوگوں اور سکول سے اس قدر نفرت؟؟

لوگوں اور سکول سے اس قدر نفرت؟؟
لوگوں اور سکول سے اس قدر نفرت؟؟

  



سنٹ پال (نیوزڈیسک) امریکی نوجوانوں میں تشدد کے بڑھتے ہوئے رجحانات کی مثالیں کثرت سے سامنے آرہی ہیں۔ متعدد ایسے واقعات ہوچکے ہیں کہ جن میں سکول کے طلباء نے اپنے کلاس فیلوز، استادوں اور قریبی لوگوں کو حملوں کا نشانہ بنایا ہے۔ آپ امریکی ریاست منی سوٹا کے ایک طالب علم کے ایسے خوفناک منصوبے کا انکشاف ہوا ہے کہ جس میں بے شمار لوگوں کی جانیں جاسکتی تھیں، یہ سترہ سالہ نوجوان اپنے ماں باپ کو ہلاک کرنے کے علاوہ قریبی جونیئر اور سینئر سکول کو بھی بم سے اڑانے کا منصوبہ بناچکا تھا اور اس مقصد کیلئے اس نے نہ صرف ایک تفصیلی منصوبہ بنالیا تھا بلکہ اسلحہ اور کچھ بم بھی تیار کرلئے تھے۔ پولیس افسر کرس مارکس نے بتایا کہ اگر منصوبے کا انکشاف نہ ہوتا تو اگلے کچھ ہفتوں میں نوجوان اپنے منصوبے پر عمل کرچکا ہوتا ہے۔ اس منصوبے کا آغاز اس وقت ہوا جب قریبی سکول کے گراؤنڈ سے تین بم برآمد ہوئے اور پولیس نے تفتیش شروع کردی۔ نوجوان نے بتایا کہ اس نے مذکورہ گراؤنڈ میں پریکٹس کیلئے بم چلاتے تھے اور وہ چاہتا تھا کہ وہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو ہلاک کرسکے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...