سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں کیلئے تشویشناک خبر، نئے قانون کی تیاری

سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں کیلئے تشویشناک خبر، نئے قانون کی تیاری
سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں کیلئے تشویشناک خبر، نئے قانون کی تیاری

  


ریاض (نیوز ڈیسک) سعودی شوریٰ کونسل منگل کے روز محکمہ لیبر کی جانب سے تجویز کی گئی قانونی ترامیم پر غور کرے گی۔ ان کا مقصد کم از کم تنخواہ میں اضافہ، بے روزگاری میں کمی اور خواتین و مردوں کے لئے کام پر حالات بہتر بنانا ہیں تاہم سعودی میڈیا نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ ان تجاویز کا بنیادی مقصد غیر ملکی ملازمین کی شرح کو کم کرکے اس سطح پر لانا ہے کہ مستقبل میں یہ قومی سلامتی کیلئے خطرہ نہ رہے۔ ایک تجویز قومی سطح کی مستقل کمیٹی کے قیام کی بھی ہے جس کا مقصد بے روزگاری کا خاتمہ اور کمپنیوں میں سعودی ملازمین کی شرح میں اضافہ یقینی بنانا ہوگا۔ اس کے علاوہ کم از کم تنخواہ پر عملدرآمد یقینی بنانے اور خواتین کیلئے ملازمت کے حوالے سے قوانین سازگار بنانے کیلئے تجاویز بھی شامل ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ نیا تجویز کردہ قانون بھی زیادہ سے زیادہ سعودیوں کیلئے ملازمت کا حصول یقینی بنانے اور غیر ملکیوں پر دارومدار کم کرنے کیلئے ہی متعارف کروایا جارہا ہے اور یہ سعودی حکومت کی پالیسیوں کا تسلسل ہے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...