2015 کے اختتام تک 522ارب 52کروڑ روپے کے بانڈز خریدے گئے

2015 کے اختتام تک 522ارب 52کروڑ روپے کے بانڈز خریدے گئے

 لاہور(آن لائن)سال 2011 میں پرائز بانڈز میں سرمایہ کاری کی مالیت تھی 277 ارب آٹھ کروڑ روپے جو سال 2012 میں ہوگئی 333 ارب 40 کروڑ روپے اور سال 2013 میں پرائز بانڈ کا شوق اور بڑھا اور سرمایہ کاری ہو گئی 390 ارب روپے جبکہ سال 2014 میں سرمایہ کاری پہنچ گئی 446 ارب 63 کروڑ روپے تک اور سال 2015 کے اختتام تک عوام 522 ارب 52 کروڑ روپے کے بانڈز خرید چکی ہے۔ امیر تو سب ہی ہونا چاہتے ہیں اور پلک جھپک کر امیر ہونے کے لئے پرائز بانڈ آخری امید ثابت ہوتے ہیں۔ پرائز بانڈز عوام کے لئے ہاٹ کیک بنتے جا رہے ہیں اور اس کی تصدیق سٹیٹ بنک آف پاکستان کے اعداد و شمار بھی کر رہے ہیں۔ ساڑھے سات کروڑ روپے کے پہلے انعام کی آس جگانے والے 40 ہزار روپے کے بانڈ میں سب سے زیادہ سرمایہ کاری کی گئی ہے جس کی مالیت 142 ارب 78 کروڑ روپے تک پہنچ چکی ہے جبکہ پہلے انعام میں صرف سات لاکھ کی امید دینے والے ایک سو روپے کے بانڈز میں سب سے کم چھ ارب 90 کروڑ روپے کی سرمایہ کاری کی گئی ہے۔ عوامی سوچ اپنی جگہ لیکن کاروباری طبقے کے مطابق چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار میں مندی بھی پرائز بانڈز کی خریداری میں دلچسپی پیدا کر رہی ہے۔

مزید : کامرس