عراق مظاہرین نے گرین زون خالی کرنا شروع کر دیا

عراق مظاہرین نے گرین زون خالی کرنا شروع کر دیا

  

بغداد(این این آئی)عراق میں شیعہ عالم دین مقتدیٰ الصدر کے حامیوں نے پارلیمنٹ کے قریب سے اپنا احتجاجی دھرنا عارضی طور پر ختم کرنے کا اعلان کر دیا ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق گزشتہ ہفتہ کو مقتدیٰ کے ہزاروں حامیوں نے حساس ترین سرکاری علاقے گرین زون میں گھس کر پارلیمنٹ کی عمارت پر دھاوا بولا اور بعض قانون سازوں کو زدوکوب بھی کیا ٗمظاہرین بعد ازاں پارلیمنٹ کے قریب احتجاجاً دھرنا دے کر بیٹھ گئے تھے ٗمقتدیٰ الصدر عراق کے وزیراعظم حیدر العبادی سے کابینہ میں ردوبدل کا مطالبہ کرتے آرہے تھے۔اتوار کو دیر گیے مظاہرین نے دھرنا ختم کر دیا اور مقتدیٰ کے دفتر سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا کہ یہ اقدام شیعہ مسلک کے اہم مذہبی ایام کے احترام میں کیا گیا۔مظاہرین کے پارلیمنٹ پر حملے کے بعد تقریباً 60 قانون ساز بغداد سے اربیل اور سلیمانیہ کے علاقوں میں منتقل ہو گئے تھے۔ ان میں اکثریت سنیوں اور کردوں کی تھی۔حکام کے مطابق احتجاج کرنے والوں کی تعداد ہزاروں میں تھی جو اس اہم ترین علاقے میں دھرنا دیے ہوئے تھے۔

مزید :

عالمی منظر -