فوڈ مراکز پر باردانہ کی مبینہ بندر بانٹ عملہ مڈل مین بیوپاریوں کو نوازنے لگا ،کاشتکاروں کا احتجاج

فوڈ مراکز پر باردانہ کی مبینہ بندر بانٹ عملہ مڈل مین بیوپاریوں کو نوازنے لگا ...

خانیوال، ٹھٹھہ صادق آباد،عبدالحکیم ، چوک میتلا، بوریوالہ،قطب پور، جتوئی، چوک اعظم، بہاولپور، حاصلپور (نمائندگان) فوڈ مراکز(بقیہ نمبر24صفحہ12پر )

پر باردانہ کی مبینہ بندر بانٹ ‘عملہ مڈل مین ‘بیوپاریوں اور من پسند افراد کو نوازنے لگاعبدالحکیم ،جتوئی میں کاشتکاروں کا احتجاج ‘مراکز میدان جنگ بن گئے تفصیل کیمطابق خا نیوال سے ڈسٹرکٹ رپورٹرکے مطابق محکمہ خو را ک کی طر ف سے من پسند لو گو ں میں با ردا نہ کی بندر بانٹ کا سلسلہ جا ری ہے غر یب کسا ن چھو ٹے کا شتکا ر سا را دن قطا ر میں کھڑ ے ہو کر سینٹرو ں پر ذلیل و خوا ر ہو رہے ہیں حکو مت گندم کی امدا دی قیمت اور دانے دانے کی خر یدا ری کا یقینی بنا ئے ان خیا لا ت کا ظہا ر یو نین کو نسل حلقہ 111کی چیئر مین اور پا کستان تحر یک انصا ف کی مر کزی رہنما ء مسز شا ہد ہ احمد نے صو با ئی حلقہ 218کے مختلف سینٹرو ں گندم کی خریدا ری کے مرا کز کے دورہ کے مو قع پر کسا نو ں کو وفو د سے بات چیت کر تے ہو ئے کیاٹھٹھہ صادق آباد سے نمائندہ پاکستان کے مطابق گندم خریداری سنٹر ٹھٹھہ صادق آباد کے کوآڈینٹر غلام مصطفی،فوڈ انسپکٹر رانا سرور کی طرف سے باردانہ کی بندر بانٹ اور کسانوں کے استحصال کا سلسلہ جاری ہے،سنٹر کوآڈینٹراور فوڈ انسپکٹر کی بیوپاریوں مڈل مین آڑھیتوں کے ساتھ ملی بھگت سے مند پسند،چہیتے سیاسی ٹاوٹوں میں باردانہ کی تقسیم جاری ہے،جبکہ فوڈ انسپکٹر رانا سرور کی طرف سے گندم کی ان لوڈنگ کے دوران اضافی گندم وصول کرتے ہوئے کسانوں کا خون چوساجانے لگاہے جبکہ باردانہ سے محروم نواحی چکوک 135دس آر،136دس آر کے متاثرہ کسانوں محمد شفیق ،خالد فاروق،محمد ارشاد،صوفی محمد رفیق،منور علی،شجاع الدین،شکیل احمد،منور حسین،رانا تصور،عباد علی،ارشد علی،محبوب علی،محمد شریف،مرسلین،محمد اکرم، شرافت علی،عبدالستار،محمد اقبال،محمد جاوید،محمد حسین نے سنٹرکوآڈینٹر غلام مصطفی،فوڈ انسپکٹر رانا سرور کے خلاف احتجاجی مظاہر ہ کرتے ہوئے بتایا کہ وہ اپنے مال مویشی زیورات بیج کر باردانہ حصول کے لئے بینک سے کال ڈیپازٹ بنواکر لئے پھر رہے ہیں،مگر گزشتہ آٹھ روز گزرنے کے باوجودانہیں باردانہ نہیں دیا گیاباردانہ نہ ملنے سے گندم کی فصل کھلے آسمان تلے پڑ ی خراب ہونے لگی،متاثرہ کسانوں نے احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ وہ سنٹر کوآڈینٹر اور فوڈ انسپکٹر کے خلاف آج ڈائریکٹر اینٹی کرپشن ملتان کے آفس میں پیش ہوں گے،کسانوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب،سیکرٹری خوراک،ڈی سی او خانیوال سے نوٹس لیتے ہوئے کاروائی کا مطالبہ کیا ہے عبدالحکیم سے نامہ نگار کے مطابق حکومت پنجاب کی طرف سے عبدالحکیم میں قائم کردہ فوڈ سنٹر میں باردانہ کی تقسیم پر کسان برادری مشتعل ہوگئی سنٹر انچارج رانا محمد رفیق جو کہ عبدالحکیم کے نواحی علاقہ قتالپورکا رہائشی ہے اور وہ قتال پور، حویلی کورنگا کے کاشتکاروں کو باردانہ تقسیم کر دیتے ہیں جبکہ مقامی کاشتکار سارادن لائنوں میں کھڑے ہو کر باردانہ حاصل کئے بغیر واپس چلے جاتے ہیں زمینداروں چوہدری نذیر ،خالد جٹ،محمد یٰسین جٹ،خضر حیات ہراج،جہانگیر ہراج،محمد اظہر ،میاں فاروق سہو کے علاوہ سینکڑوں کاشتکاروں نے کہا کہ اگر باردانہ کی ترسیل کو شفاف نہ بنایا گیا تو آج روڈ بلاک کر کے بھر پور احتجاج کیا جائے گا۔عبدالحکیم سے نمائندہ خصوصی کیمطابق باردانہ کے حصول کے لئے آئے ہوئے کاشت کاروں نے احتجاج کرتے ہوئے فائیلں پھاڑ دیں اور نعرہ بازی بھی کی کاشت کاروں نے بتایا ہے کہ ہم کئی دن سے ذلیل وخوار ہو رہے ہیں مگر سفارشی لائن مین لگے بغیر باردانہ حاصل کر لیتے ہیں باردانہ کے انچارج زراعت آفیسر رانا رفیق نے بتایا ہے کہ حکومت نے جو شرائط اور طریقہ بتایا ہیدریں اثناآڑھتیوں اور بیوپاریوں نے محکمہ خوراک سے باردانہ کے حسول کے لئے جدید طریقہ اختیارکر لیا بیوباری جس کاشت کار اور زمین دار سے گندم خریدتے ہین اس سے اسکی کاشت فصل گندم کی گرواری کی نقل بھی لے لیتے ہیں اور فائل متعلقہ کاشت کار کے نام کی ہی بناتے ہیں، پھر اسی فائل پر خالی باردانہ حاصل کر لیتے ہیں گندم خریدنے والوں نے کاشت کاروں کو لوٹنے کے دیسی کنڈے اور اوزان بنا رکھے ہیں جبکہ انکی چیکنگ کبھی بھی نہیں کی جاتی ۔چوک میتلا سے نمائندہ پاکستان کے مطابق چک نمبر 160ڈبلیو بی کے مرکز خرید گندم کے انچارج محمد گل خان نے حکومت پنجاب کے اعلان پہلے آئیئے پہلے پائیئے کو ہوا میں اڑا دیا سفارشی اور بیوپاریوں کی موجیں بچارے سادہ چھوٹے کسان سارا دن ذلیل و خوار ہو کر اپنے گھروں کو واپس لوٹ جاتے ہیں سفارشیوں میں باردانہ تقسیم ہو نے لگا کسانوں نے ڈی سی او وہاڑی سے گندم خرید سنٹر 160ڈبلیو بی کے انچارج کے خلاف سخت نوٹس لینے کا مطالبہ کیا۔بورے والہ سے تحصیل رپورٹر کیمطابق حکومت کی طرف سے بورے والا تحصیل میں محکمہ پاسکو کی طرف سے طے شدہ پالیسی کے مطابق محکمہ مال کی خسرہ گرداوری کی روشنی میں10بوری باردانہ فی ایکڑ دینے کی بجائے اسے تین بوری فی ایکڑ کردیا گیا ہے پاسکو نے بورے والا سے4لاکھ بوری کا ٹارگٹ مقرر کیا ہے حالانکہ اس سال اس علاقے میں 35لاکھ بوری گندم کی فصل پیداہوئی ہے گندم کے کاشتکارباردانہ کے حصول کے لئے خریداری سنٹروں پر دھکے کھا رہے ہیں ان کا کوئی پرسان حال نہیں ہے پاکستان کسان اتحاد کے ضلعی صدر ملک ذوالفقارحسین اعوان،جنرل سیکرٹری چوہدری محمد مہران اور محبوب اخترمنہاس کے علاوہ بورے والا تحصیل کے گندم کے کاشتکاروں نے صوبائی وزیر خوراک وزیر اعلیٰ پنجاب اور وفاقی حکومت سے اپیل کی ہے کہ بورے والا میں پاسکو کی خریداری گندم پالیسی کا جائزہ لے کر ٹارگٹ میں اضافہ کیاجائے۔قطب پور سے نامہ نگار کے مطابق چٹ نہر فوڈ عملہ اور مڈل مینوں کا ایکا ،چھوٹے کاشتکاروں کو باردانے کی دستیابی خواب بن کر رہ گئی ۔راتوں رات باردانہ مخصوص بیوپاریوں کو دیدیا جاتا ہے ۔25اپریل سے اب تک کسی ایک کاشتکار کو بھی باردانہ نہیں دیا گیا کاغذوں میں 7ہزار روازانہ کی بنیاد پر فراہمی جاری ہے کوئی پوچھنے والا نہیں اسسٹنٹ کمشنر کا حکم بھی ہوا میں اُڑا دیا ۔پنجاب حکومت کے بلند بانگ دٰعوؤں کی قلعی کھل گئی ہے کاشتکاروں حاجی محمد سعید ،محمد نواز،شیر محمد ،محمد شہباز چکنمبر35ایم ،گل محمد 25ایم،محمد اقبال 18ایم،محمد رفیق 4ایم ،کبیر خاں 10ایم ،محمد مشتاق محمد لقمان 17ایم،محمد شریف 7ایم،محمد افضال 11ایم ،محمد امین 11ایم و دیگر سینکڑوں نے میڈیا کے سامنے دہائی دیتے ہوئے بتایا ۔انہوں نے مذید بتایا کہ انچارج رانا ذوالفقار،قیصر عباس فوڈ گرین سپروائزرنے پرائیویٹ شخص کے اختیارات سونپ رکھے ہیں جبکہ کوارڈینٹر مہر راشد بھی ہتک آمیز رویہ اختیار کرتا ہے ۔جتوئی سے نامہ نگار کے مطابق گزشتہ روز پاسکو سنٹر بکائنی پر اس وقت کشیدہ صورت حال بن گئی موضع بھنڈی کورائی اور لنڈی پتافی کے کسانوں نے بار دانہ نہ ملنے پر پاسکو سنٹر پر احتجاج کیا تو پاسکو عملہ نے کاشتکاروے احتجاج کے باوجود بار دانہ دینے سے انکار کر دیا ۔کاشتکاروں نے سنٹر کے سامنے احتجاجی دھرنا دینے کا اعلان کیا اور سنٹر پر موجود آڈھیتوں کو دیا جانے والا بار دانہ بھی رک لیا ۔ اس موقع پر تھانہ جتوئی تھا نہ میر ہزار کی پولیس ڈی ایس پی ملازم خان جتوئی کے ہمراہ موقع پرپہنچے اور کسانوں سے مذاکرات شروع کر دیے مذاکرات کے لیئے کسانوں کی نمائندگی نصراللہ خان کورائی پاسکو کے ڈی جی ایم محمد علی کہری اور ڈی ایس پی جتوئی کے درمیان مذاکرات ہوئے پاسکو ڈی جی ایم نے کسانوں کو بار دانہ فراہمی کی یقین دہانی کرائی اس موقع پر عبد الکریم خان ، محمد ارشاد خان ، نسیم اختر آصف خان ، کالو خان ، غلام اکبر ، عبد الغفور ، محمد اقبال ، نوراحمد ، و دیگر کاشتکار بھی موجود تھے ۔ چوک اعظم سے سٹی رپورٹر کیمطابق PTIکے رہنما سابق امیدوارایم پی اے اصغر علی میلوانہ نے نمائندگان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاسکو سنٹر مرہان پر نمائندہ DCOلیہ کوارڈینیٹر محمدجاویدکے پاس ایک کسان آیا اس نے کہاکہ مجھے باردانہ دو تو اس نے کہا کہ باردانے کا جتنا ٹارگت روزانہ کی بنیاد پر ہمیں دیا جاتا ہے ہم نے باردانہ جاری کردیا ہے لہزاآپ صبح آجائیں تو اس کسان نے مسلم لیگی چیئرمین یونین کونسل نورمحبوب میلوانہ کو شکایت کی تو چیئرمین مہر نور محبوب میلوانہ اپنے ساتھیوں کے ہمراہ پاسکو سنٹر پر آگیا اورکوارڈینیٹر محمدجاوید سے کہاکہ پنجاب میں مسلم لیگ کی حکومت ہے اور میں جس کو رقعہ بنا کر دوں اس کو باردانہ کی ترسیل کرو باقی کسی کو نہ کرو تو محمدجاوید نے کہا کہ میں گورنمنٹ کے دئے ہوئے شیڈول کے مطابق ہی بادانہ کی ترسیل کروں گا تو چیئرمین مہر نورمحبوب سیخ پا ہوگے اوراپنے ساتھیوں کے ہمراہ کوارڈینیٹر جاوید کو غلیظ گالیاں دینے لگ گئے اور جاوید کی کال پر تحصیل لیہ میں تما م پاسکو سنٹر کوارڈینیٹرز نے باردانہ کی ترسیل کو روک دیا اس امر میں سنٹر انچارج محمداسلم قریشی نے کہاکہ پاسکو سنٹر مرہان بند نہیں ہوا بلکہ کوارڈینیٹر زنے باردانہ کی ترسیل کو بند کردیا ہے ہمارا سنٹر چل رہا ہے مہر نور محبوب میلوانہ چیئرمین یونین کونسل مرہان نے اپنے موقف میں کہاکہ پاسکو کی میٹنگ ہے جسکی وجہ سے پاسکو سنٹر والوں نے کوئی ہڑتال کی ہوگی PTIمہر اصغر علی میلوانہ نے کہا ہم کوارڈینیٹر محمدجاوید پر بدتمیزانہ روایہ اختیار کرنے کی شدید مزمت کرتے ہیں۔ بھکر سے نامہ نگار کے مطابق اسسٹنٹ کمشنربھکرعلی اخترسیف اللہ کواطلاع ملی کہ سرائے مہاجرکے علاقہ چک نمبر209ٹی ڈی اے میں آڑھتی محمدیعقوب اورمحمدسلیم سرکاری باردانہ میں گندم بھررہے ہیں اگرریڈکیاجائے توملزمان قابوآسکتے ہیں اطلاع ملتے ہی مزکورہ جگہ پرریڈکیاگیاتوملزمان سرکاری باردانہ میں گندم بھررہے تھی فوڈانسپکٹرکی مدعیت میں تھانہ سرائے مہاجرپولیس نے مقدمہ درج کرلیا۔بہاولپور سے ڈسٹرکٹ رپورٹر کیمطابق گندم خریداری سنٹربنی شیلز بارہ بی سی پرگندم خریداری کمیٹی میں تمام بیوپاریوں محمدوحید، طارق حسین، محمدعمران، ریاض کلیانہ اوردیگر کوشامل کیاگیاہے جوکہ سارادن فوڈ سنٹر پرغریب کاشتکاروں کیساتھ غنڈہ گردی کرنے کے علاوہ اپنی مرضی کے مطابق میرٹ کی دھجیاں اڑاتے ہوئے من پسند افراد کوباردانہ جاری کراتے ہیں فوڈ سنٹر پرموجودہ متاثرہ کاشتکاروں شہزاد چیمہ، ذوالقرنین چٹھہ، مختیار احمد پٹواری محمداکرم اوردیگرنے میڈیاکوبتایاکہ بیوپاریوں کی اجاری کے باعث غریب کاشتکار25 اپریل سے دھکے کھارہے ہیں فوڈ سپروائزر محمداصغرا ن کے ساتھ ملاہواہے جسکی وجہ سے باردانہ فہرستوں میں ردوبدل کرکے بھتہ دینے والوں کونوازاجارہاہے ۔حاصل پور سے نامہ نگار کے مطابق تحصیل حاصل پور میں محکمہ خوراک مراکز خریداری گندم پرآڑھتیان ، مڈل مینوں اور عوامی نمائندوں کے چہیتوں کا قبضہ۔چھوٹے کسان ابھی تک باردانہ سے محروم ۔کسان اپنی اجناس سستے داموں مڈل مینوں بیوپاریوں کو فروخت کرنے پر مجبور۔ ان خیالات کاا ظہار تحریک انصاف کے مرکزی راہنما حلقہ 186 این اے حاصل پور کے امیدوار سید علی زین بخاری نے ایک پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ موجودہ حکمرانوں کی کرپشن لوٹ مار اور ناقص زرعی پالیسیوں کے باعث ملک کا کسان طبقہ پریشان ہے ۔ انہوں نے کہاکہ اگر حکام بالا نے کوئی توجہ نہ دی تو تحریک انصاف کے کارکنان اور کسان عدالت چوک میں احتجاج کریں گے۔

گندم

مزید : ملتان صفحہ آخر