پولیس کا کام شہریوں کا تحفظ کرنے کے بجائے ان کی جائیدادوں پر قبضہ کرنا بن گیا ہے :ہائیکورٹ

پولیس کا کام شہریوں کا تحفظ کرنے کے بجائے ان کی جائیدادوں پر قبضہ کرنا بن گیا ...

لاہور(نامہ نگارخصوصی)ایس ایچ او ستوکتلہ جاوید صدیق نے پی آئی اے سوسائٹی کے اراضی مالک کو قبضہ گروپ بنا دیا، شہری داد رسی کے لئے لاہور ہائیکورٹ پہنچ گیا۔ عدالت نے ایس ایچ او اور سی سی پی او سے جواب طلب کرتے ہوئے قرار دیا ہے کہ پولیس کو شہریوں کے حقوق غصب کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے۔جسٹس محمد یاور علی نے پی آئی اے سوسائٹی کے رہائشی محمد وسیم کی ایس ایچ او ستوکتلہ جاوید صدیق کے خلاف درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ وہ پی آئی اے سوسائٹی میں 7کنال 10مرلہ اراضی کے مالک ہے، اراضی کی رجسٹری ، انتقال سمیت تمام سرکاری دستاویزات پر درخواست گزار کا نام درج ہے جبکہ ہمیشہ سے محکمہ ایکسائز میں ٹیکس بھی درخواست گزار ہی ادا کر رہا ہے ، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ ایس ایچ او ستوکتلہ جاوید صدیق مسلم لیگ (ن)کے مقامی کارکنوں عاشق حسین بھلی اور کوثر جاوید سے مل کران کے پلاٹوں پر قبضہ کرنا چاہ رہے ہیں اور درخواست گزاروں کے خلاف جھوٹے مقدمات درج کئے جا رہے ہیں، ایس ایچ او نے درخواست گزار کے خلاف اسکی ملکیتی جائیداد پر ہی قبضہ کرنے کی کوشش کا مقدمہ درج کر وا یا،ستوکتلہ پولیس کو درخواست گزاروں کی اراضی پر قبضہ کرنے اور جھوٹے مقدمات درج کرنے سے روکا جائے، عدالت نے دوران سماعت ریمارکس دیئے کہ پولیس کا کام شہریوں کا تحفظ کرنے کی بجائے ان کی جائیدادوں پر قبضہ کرنا بن گیا ہے، پولیس کو شہریوں کے حقوق غصب کرنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی، عدالت نے ایس ایچ او ستوکتلہ اور سی سی پی او سے 6 مئی کے لئے تفصیلی جواب طلب کیا ہے اور درخواست گزار کے خلاف درج تمام مقدمات بھی پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔

مزید : علاقائی