شہباز شریف کا زہریلی مٹھائی سے جاں بحق ہونیوالوں کے خاندانوں کے افراد کو ملازمتیں دینے کا اعلان

شہباز شریف کا زہریلی مٹھائی سے جاں بحق ہونیوالوں کے خاندانوں کے افراد کو ...

  

فتح پور(سٹی رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف لیہ کے نواحی چک 105ایم ایل گئے اور زہریلی مٹھائی کھانے سے جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین سے ملاقات کی۔وزیر اعلی نے دل خراش واقعہ پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے جا ں بحق افراد کے اہل خانہ سے تعزیت کا اظہار اور مرحومین کے درجات کی بلندی کیلئے فاتحہ خوانی و لواحقین کیلئے صبر جمیل کی دعا کی۔وزیراعلی فردا فردا متاثرہ گھرانوں کے لواحقین کے پاس گئے‘ ان سے ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کیااور افسوسناک واقعہ کی تفصیلات معلوم کیں۔ وزیر اعلیٰ نے ایک ہی خاندان کے زہریلی مٹھا ئی سے جاں بحق ہونے والے 13 افراد کے سربراہ عمر حیا ت ، نا صر بی بی ، محمد نذیر ، بشریٰ پروین ، فاطمہ بی بی، زاہدہ بی بی ، محمد صدیق، سلمیٰ بی بی ، حمیدہ بی بی ، عظمت بی بی ، فیض محمد ، ریاست علی ، شاکر علی ،محمد نواز ، رحمت علی ، محمد نیاز ، کلثوم بی بی ، محمد اکبر ، مقبول حسین سے اظہار تعزیت کیا۔ وزیر اعلی نے جاں بحق افراد کے لواحقین سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس دل خراش واقعہ پر ہر آنکھ اشکبار ہے۔ میری اور پنجاب حکومت کی ہمدردیاں جاں بحق ہونے والے افراد کے غمزدہ خاندانوں کے ساتھ ہیں۔ اس المناک واقعہ پر پوری قوم کو افسوس ہوا ہے۔ وزیراعظم محمد نوازشریف نے بھی اس افسوسناک واقعہ پر آپ سے تعزیت اور دلی دکھ کا اظہار کیا ہے۔زہریلی مٹھائی سے 30معصوم اور قیمتی انسانی جا نوں کے ضیاع پر وزیر اعظم پا کستا ن و پو ری قوم سوگوار ہے اور میں وزیر اعظم محمد نواز شریف کی جا نب سے اس قیا مت صغریٰ کے موقع پر آپ کے دکھ میں شریک ہو نے کے لئے حاضر ہوا ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ زہریلی مٹھا ئی سے ہما رے 30بیٹے بیٹوں ، بہنوں و بھا ئیوں کی شہادت قیامت صغریٰ ہے اور اس افسوسناک واقعہ سے ہنستے بستے گھر ویران ہو گئے ہیں ۔ وزیرا عظم نے مجھے خصوصی طور پررنج و الم کی اس گھڑی میں آپ کے دکھوں میں شریک ہونے کے لئے بھجوایا ہے ، وزیر اعظم پا کستان اس عظیم انسانی المیہ پر دکھی اور رنجیدہ ہیں اور جب تک آپ کو انصاف نہیں مل جا تا میں چین سے نہیں بیٹھوں گا ۔وزیراعلیٰ نے لیہ میں زہریلی مٹھائی سے جاں بحق ہونے والوں کے خاندانوں کے افراد کو ملازمتیں دینے کا اعلان کیا اور کہا کہ پنجاب حکومت آپ کی ہر ممکن دیکھ بھال کرے گی اور آپ کو تنہا نہیں چھوڑے گی۔ میں آپ کے پیارے تو واپس نہیں لا سکتا لیکن آپ کیلئے جو کچھ ہو سکا وہ کیا جائے گا۔ انہو ں نے کہا کہ میں اس افسوسناک واقعہ کی انکوائری کرا رہا ہوں ، جلد رپورٹ سامنے آئے گی۔میرا آپ سے وعدہ ہے جہاں بھی غفلت سامنے آئی ذمہ داروں کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی ہو گی اور کوتاہی کے ذمہ داروں سے پورا حساب لیا جائے گا۔ آپ کے ساتھ مکمل انصاف ہوگا اور انصاف ہوتا نظر بھی آئے گا۔ انہوں نے کہا کہ جن افراد نے مٹھائی میں زہریلی دوا ڈالی ہے ان کے خلاف بھی کارروائی ہوگی، آپ بالکل فکر نہ کریں۔ ذمہ دار بچ نہیں سکیں گے۔وزیراعلیٰ نے لواحقین کو دلاسہ دیتے ہوئے کہا کہ انکوائری کمیٹی کی رپورٹ کی روشنی میں میں یہاں دوبارہ آؤں گا اور آپ کے سامنے تمام حقائق رکھ کر انصاف کے تقاضوں کے مطابق اقدامات کروں گا۔وزیراعلیٰ نے لواحقین کو یقین دہانی کرائی کہ اگر اس واقعہ کے دوران کوئی انتظامی یا علاج معالجے میں کوتاہی سامنے آئی تو اس کے اسباب رپورٹ میں سامنے آ جائیں گے۔ ذمہ داروں کو معافی نہیں ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ علاقے کی ضروریات کو ترجیحی بنیادوں پر پورا کیا جائے گا۔ وزیراعلیٰ نے علاقے کے بنیادی مراکز صحت کو اپ گریڈ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ آپ کے گاؤں میں سڑکوں اور سکولوں کو بھی بہتر بنایا جائے گا۔ پنجاب حکومت آپ سے ہرممکن تعاون جاری رکھے گی۔ انصاف پورا ہوگا اور حساب بھی پورا لیا جائے گا۔ میرٹ اور شفاف انکوائری کے نتیجہ میں جو بھی غفلت کا مرتکب پا یا گیا اسے مثالی اور کڑے احتساب کا سامنا کر نا پڑے گا۔ انہوں نے کہا مریضوں کی دیکھ بھال احسن طریقے سے کرنے والے شاباش کے مستحق ہیں۔ وزیر اعلی نے جاں بحق افراد کے لواحقین کو اندوہناک واقعہ پر تسلی اور حوصلہ دیا۔ قبل ازیں وزیراعلیٰ کو اس افسوسناک واقعہ کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔ بریفنگ کے دوران تسلی بخش جواب نہ دینے پر وزیراعلیٰ نے متعلقہ حکام پر برہمی کا اظہار کیا۔ وزیر اعلی عام وین میں بیٹھ کر لیہ کے چک 105 ایم ایل پہنچے اور انہوں نے سٹیج پر کرسیاں رکھنے پر برہمی کا اظہار کیا۔ اس موقع پر صوبائی وزیر خوراک بلال یٰسین ، ایم این اے صاحبزادہ فیض الحسن ،ایم پی اے چوہدری اشفاق احمد ، ایم پی اے قیصر عباس خان مگسی ، صوبائی پارلیمانی سیکرٹری برائے داخلہ مہر اعجاز احمد اچلا نہ ، سابق صوبا ئی وزیرضلعی صدر مسلم لیگ ن ملک احمد علی اولکھ ، سابق ایم پی اے ملک عبدالشکور سواگ ،کمشنر ڈی جی خان ، آر پی او ، ڈی سی او لیہ اور ڈی پی او لیہ بھی مو جو د تھے ۔

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت سکول ایجوکیشن کی بہتری کے جامع پروگرام پر عمل پیرا ہے۔ معیاری تعلیم کے فروغ کیلئے ٹیچرز ٹریننگ پروگرام نہایت اہمیت کا حامل ہے۔ ٹیچرز ٹریننگ پروگرام تعلیمی اصلاحات کے روڈمیپ کا ایک اہم جزو ہے۔سکولو ں میں اصلاحات کے پروگرام پر عملدرآمد کے بہتر نتائج برآمد ہو رہے ہیں۔ حکومتی اقدامات کی بدولت تعلیم کے معیار میں بہتری آئی ہے۔ ملک کا مستقبل تعلیم سے وابستہ ہے۔تعلیم اور صحت ہماری اولین ترجیحات ہیں۔ دونوں شعبوں کی بہتری کیلئے جتنے وسائل درکار ہیں، دیں گے۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے ان خیالات کا اظہار یہاں اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔4 گھنٹے تک جاری رہنے والے اجلاس میں سکول ایجوکیشن کی بہتری، اساتذہ کی تربیت، آئی ٹی کے فروغ سمیت دیگر اہم امور کا جائزہ لیا گیا۔وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت سکولو ں میں عدم دستیاب سہولتوں کی فراہمی پر بھرپور توجہ مرکوز کئے ہوئے ہے۔سکولوں میں اربوں روپے سے عدم دستیاب تعلیمی سہولیات کی فراہمی یقینی بنائی جا رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ طلبا و طالبات کی تخلیقی صلاحیتوں کو اجاگر کرنا بھی نہایت ضروری ہے۔تدریس کے معیار کو بہتر بنانے میں جدید ٹیکنالوجی کا استعمال سودمند ثابت ہو سکتا ہے۔اربوں روپے کی لاگت سے پنجاب کے ہائی سکولوں میں آئی ٹی لیبز بنائی گئی ہیں۔ میرٹ اور شفاف پالیسی کے تحت ذہین طلبا و طالبات میں لیپ ٹاپ تقسیم کئے گئے ہیں اور اب ہائی سکولوں کے طلبا و طالبات میں ٹیبلٹس تقسیم کرنے کا پروگرام بنایا گیا ہے۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ معیاری تعلیم کے فروغ سے ہمارا مستقبل جڑا ہے۔ نئی نسل کو جدید علوم سے آراستہ کرکے پاکستان کے مستقبل کو تابناک بنائیں گے۔اینٹوں کے بھٹوں پر کام کرنے والے بچوں کو تعلیم کیلئے سکولوں میں لایا گیا ہے۔ ہوٹلوں، ورکشاپوں اور پٹرول پمپوں سے چائلڈ لیبر کا خاتمہ ہمارا آئندہ کا ہدف ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ مقرر کردہ تعلیمی اہداف کے حصول کیلئے مزید محنت، عزم اور لگن سے کام کرنا ہوگا۔ سیکرٹری سکولز ایجوکیشن نے معیاری تعلیم کے فروغ کے حوالے سے کئے گئے اقدامات کے بارے میں بریفنگ دی۔ صوبائی وزیر تعلیم رانا مشہود احمد، چیئرمین پنجاب ایجوکیشن فاؤنڈیشن انجینئر قمرالاسلام، چیف سیکرٹری، متعلقہ سیکرٹریز، ماہرین تعلیم اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی جبکہ چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان کے باشعور عوام وزیراعظم محمد نوازشریف کے ساتھ کھڑے ہیں۔ چند سیاسی عناصر ذاتی انا کی تسکین کیلئے افراتفری پھیلانے کی کوشش کر رہے ہیں۔قوم سیاسی تماشا لگانے والوں کے جھانسے میں نہیں آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا جینا مرنا عوام کے ساتھ ہے اور رہے گا۔ قرض معاف کرانے والوں اور قومی دولت لوٹنے والوں کو بھی احتساب کے کٹہرے میں آنا پڑے گا۔ انہو ں نے کہا کہ پانامہ لیکس پر شور مچانے والوں کی اپنی آف شور کمپنیاں سامنے آ چکی ہیں۔ کمیشن کے قیام کے بعد دودھ کا دودھ، پانی کا پانی ہو جائے گا۔ وہ آج یہاں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے منتخب نمائندوں سے گفتگوکر رہے تھے۔ ملاقات کرنے والوں میں ایم این اے چوہدری حامد حمید اور ایم پی اے چوہدری عبدالرزاق ڈھلوں شامل تھے۔

مزید :

صفحہ اول -