وزیراعلیٰ کے متاثرہ علاقہ کے دورہ کی جھلکیاں ( ظفر اقبال ‘طارق پہاڑ سے )

وزیراعلیٰ کے متاثرہ علاقہ کے دورہ کی جھلکیاں ( ظفر اقبال ‘طارق پہاڑ سے )

  

وزیر اعلی پنجاب میاں محمد شہباز شریف با لا آخر 31افراد کا زہریلی مٹھا ئی کھا نے سے موت کے گھاٹ اتر جا نے پر چک نمبر 105/TDAمیں لو حقین کے سا تھ اظہار افسوس فا تحہ خوانی اور ہمدردی کے لئے پہنچے دورے کی جھلکیاں ۔

*آمد صبح 9بج کر 7منٹ پر مذکورہ چک میں ہیلی پیڈ پر اترے ہیلی کا پٹر سے اترتے ہی سرمائی گا ڑی لینڈ کروزر نمبری 6947-LEFکے ذریعے 6سو گز کے فا صلے پر پنڈال میں پہنچے *پنڈا ل میں را ئٹ طرف سے دا خل ہو ئے پنڈا ل دو حصو ں میں تقسیم تھا ایک حصے میں گورنمنٹ اتھارٹی مجاز آفیسران کی نشیستیں تھیں جب کہ دو سرے حصے میں زہریلی مٹھائی کھا نے سے 31افراد مرنے وا لوں کے ساتھ چکوک سے آئے ہو ئے لوا حقین کی نشیستیں تھیں 150کرسیاں لگا ئی گئیں کرسیوں کے رو میں پلے کارڈ اویزاں تھے جن پر لواحقین کے چکنمبر ز درج تھے*۔وزیر اعلی پنجاب میں محمد شہباز شریف کے ہمراہ مقا می ایم این ایز صا حبزادہ فیض الحسن ،سید ثقلین شا ہ بخا ری ،ایم پی ایز سر دار قیصر عباس خان مگسی ،چو ہدری اشفاق احمد ،مہر اعجاز احمد اچلا نہ ،عبدالشکور سواگ ،سا بق وفاقی وزیر زرات ملک احمد علی اولکھ ،آر پی او ڈیرہ غا زی خان رحمت اللہ نیازی ،ڈی پی او لیہ محمد علی ضیاء ڈی سی او را نا گلزار احمد و دیگر ضلعی آفسران مو جود تھے ۔*مذکو رہ چک میں ہنگامی بنیادوں پر مکمل انتظامات کرنے میں سبہی ادارے متحرک تھے سکیورٹی انتظا مات انتہائی سخت تھے ڈویژن بھر کی نفری تعینات تھی پنڈا ل کے با لمقابل 800گز کے فا صلے پر ہیلتھ یو نٹ کنٹینر نما یا ں تھا *ڈرائیکٹر پنجاب فوڈ اتھا رٹی عا ئشہ ممتا ز بھی دورے کے ہمراہ تھی *زہریلی مٹھا ئی سے مرنے والوں کے لواحقین معزور شخص با با عمر حیات اور زاہدہ بی بی نامی خاتون نے تمام واقع کے بارے وزیر اعلی پنجاب کو اگاہ کیا نشتر ہسپتال کے ڈا کٹروں اور عملہ کی غفلت کے بارے میں بھی آگاہ کیا لوا حقین کا کہنا تھا مقامی ڈسٹرک ہسپتال والے آگر معدے واش کرتے اور نشتر ہسپتال والے زہر کو زہر کے ذریعے ختم نہ کرتے تو یہ سا نحہ نہ دیکھنا پڑتا ہم نے آپنے معصوم بچوں اور افراد کو تڑپتے مرتے آپنی آنکھوں کے سا منے مرتے دیکھا ڈا کٹر صا حبان کا کہنا تھا کچھ نہیں ہوا گھر جا وٗ پینا ڈول کھلاوٗ ۔*پنڈال کے 100گز کے فا صلے پر قنا عتیں لگا کر را ستہ بند کیا ہوا تھا وزیر اعلی پنجاب کو دیکھنے کے لئے آنے والے دیگر چکوک کے لوگ عدم را بطے پر گو نواز گو کے نعرے لگا نے لگے اور قنا عتیں گرا کر پنڈا ل کی طرف بڑھے تو انتظا میہ نے بگڑتے ہو ئے حا لات کو کنٹرول کیا اس مو قع پر مسلم لیگ ن کے عوامی نما ئیندوں کا کہنا تھا میڈیا کی شرارت پر عوام مشتعل ہو ئی ۔سا بق وزیر زراعت ملک احمد علی اولکھ مشتعل اعوام سے منت سما جت کرتے رہے کہ جو کچھ آپ کے مطا لبے ہیں میں پو رے کرواوٗ گا نعرے لگا نے بند کرو ،عوام نے اپنا استحقاق جا ری رکھا ،گو نواز گو *وزیر اعلی پنجاب اور انتظا میہ کا میڈیا ورکروں کے ساتھ رویا انتہا ئی غیر منا سب تھا پرا ئیویٹ میڈیا کو کورج کے لئے اجا زت نہ دی گئی جب کے سرکاری میڈیا پیش پیش رہا ۔ *عبد الرحمن ،عبدالستار نا می بزرگ مذکورہ چک کے رہا ئشی سا بقہ ایم پی اے چو ہدری الظاف حسین کی طرف سے حو نے وا لی زیا دتی پر رو تے پیٹتے قنا عت پھاڑ کر پنڈال میں وزیر اعلی کے سا منے پیش ہو نے کے لئے دا خل ہو نے پر انتظا میہ نے روک لیا DSPکروڈ رمیض بخا ری نے کہا کہ آپ کی حق رسی کی جا ئے گی ۔*وزیر اعلی پنجاب میں محمد شہباز شریف زہریلی مٹھا ئی سے مرنے والوں کے لوا حقین کے ہمراہ ایک گھنٹہ دس منٹ سا تھ رہے وزیر اعلی نے اس موقع پر مذکو رہ چک کے مڈل سکول کو اپ گریڈ ڈسپنسری کا قیام 5لاکھ فی کس دینے کا علان اور نو کریاں دینے کا واعدہ کیا اور کہا اس سا نحہ میں غفلت اور کوتا ئی کے مرتکب ڈا کٹروں اور عملہ کو نفری سے بر خاست کر دیا جائی گا اعلی تحقیقاتی کمیٹی قا ئم کی جا ئے گی ۔*الیکٹرونک اور پرنٹ میڈیا کے درجنوں نما ئندگان کو پنڈال میں جا نے کی اجازت نہ دی جو سراسر نا انصافی اور گڈ گورننس پر سوالیہ نشان ہے ۔ *۔وزیر اعلی دورے سے واپسی 10:15منٹ پر پنڈال سے ہیلی پیڈ تک لینڈ کروزر کے ذریعے گئے تو پیچھے ڈی پی او لیہ آپنے اہلکاروں کے ہمراہ پیدل بھا گ رہے تھے جبکہ آگے اور پیچھے دو دو گاڑیاں سکوارڈ مو جود تھیں اور ڈی سی او لیہ را نا گلزار احمد دیگر آفیسران کے ساتھ پرا ئیویٹ گا ڈی نمبر 5475میں ہمراہ تھے ہیلی کا پٹر کی پرواز سے اندھیری کا سما ں تھا ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ اول -