حکقومت متاثرہ خاندانوں کی مناسب کفالت نہیں کر سکتی تو کیمپوں میں رہائش کو ترجیح دینگے ، ہنگو قومی جرگہ

حکقومت متاثرہ خاندانوں کی مناسب کفالت نہیں کر سکتی تو کیمپوں میں رہائش کو ...

  

ہنگو(بیورورپورٹ)اورکزئی ایجنسی متاثرین کی آبادکاری،متاثرہ خاندانوں کے حقوق کے لئے قومی گرینڈ جرگہ منعقد۔18اقوام کے قبائلی عمائدین سمیت متحدہ قبائل پارٹی کے وائس چیئر مین ملک حبیب نور اورکزئی،رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر غازی گلاب جمال اور جے یوآئی کے مولانا حسین جلالی کی بھی شرکت۔حکومت متاثرہ خاندانوں کی مناسب کفالت نہیں کر سکتی توکیمپوں میں رہائش کو ترجیح دیں گے۔ملک حبیب نور و دیگرکا خطاب۔تفصیلات کے مطابق اورکزئی ہیڈ کوارٹر ہنگو میں اورکزئی قبائل کے 18اقوام کے عمائدین پر مشتمل قومی گرینڈ جرگہ منعقد ہوا۔جس میں متحدہ قبائل پارٹی کے وائس چیئر مین ملک حبیب نور اوکزئی، ایم این اے اورکزئی ایجنسی غازی گلاب جمال اورکزئی اور مولانا میاں حسین جلالی نے قومی جرگہ سے خطاب میں متاثرہ خاندانوں کی واپسی کی عمل میں ان کے حقوق فراہمی کے حوالے سے مطالبات حکومت کو پیش کر دئیے۔ملک حبیب نور اورکزئی ،ایم این اے ڈاکٹر غازی گلاب جمال اورمولانا میاں حسین جلالی نے کہا کہ محب وطن قبائلیوں نے ملک کے لئے قربانیاں دیں جبکہ ارباب اختیار متاثرین سے حقوق چھین رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ فاٹا کے تمام ایجنسیوں کے لئے یکساں قوانین کے تحت فیصلے ہونے چاہیئے جبکہ اورکزئی متاثرین کی غیر رجسٹرڈ خاندانوں کو ٹرانسپورٹ کرایہ کی کٹوتی قبول نہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت اقوام کی سطح پر مقرر شدہ قبائلی ملکان سے قومی شناختی کارڈ کے حامل متاثرہ خاندانوں کی تصدیق کروا کر رجسٹریشن یقینی بنائے۔انہوں نے کہا کہ اورکزئی ایجنسی کے ایک لاکھ 24قومی شناختی کارڈز بلاک ہیں جن کو فوری طور پر فعال بنایا جائے تا کہ واپسی کے عمل میں متاثرین کو درپیش مشکلات حل کی جائیں۔انہوں نے کہا کہ ایف ڈی ایم اے کے حکام سے ملاقاتوں میں متاثرہ خاندانوں کو مالی معاونت اور آبادکاری میں نقصانات کے مناسب سے امدادی پیکیجزفراہمی کو معیار بنایا گیا ہے۔جبکہ غیر رجسٹرڈ خاندانوں کی رجسٹریشن شرط نہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت جلد از جلد نقصانات کی سروے کی رپورٹ مرتب کر کے بحالی اور آؓبادکاری کا عمل تیز کر ے ۔مقررین نے کہا کہ متاثرین کی آبادکاری اور مسائل کے حل کے لئے اقوام بلکہ تپہ کی سطح پر کمیٹیاں قائم کریں گے۔انہوں نے کہا کہ اورکزئی ایجنسی قبائلی عمائدین اور عوام اورکزئی ایجنسی کی از سر نو تعمیر اورکزئی کے لئے اتفاق و اتحاد کا مظاہرہ کریں تا کہ مستقبل کے چیلنجوں سے نمٹا جا سکے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ اول -