عافیہ کو امریکہ کے حوالے کرنا پانامہ لیکس میں شائع ہونے والی کرپشن سے کم نہیں ہے: فوزیہ صدیقی

عافیہ کو امریکہ کے حوالے کرنا پانامہ لیکس میں شائع ہونے والی کرپشن سے کم نہیں ...
عافیہ کو امریکہ کے حوالے کرنا پانامہ لیکس میں شائع ہونے والی کرپشن سے کم نہیں ہے: فوزیہ صدیقی

  

کراچی (این این آئی) قوم کی بیٹی ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی امریکی قید نا حق سے رہائی اور وطن واپسی کیلئے کاروان غیرت کے تحت جاری مہم کے سلسلے میں پینل پاڑہ کے الآصفہ فٹبال گراﺅنڈ میں جلسہ عام کا انعقاد کیا گیا جس میں ڈاکٹر عافیہ کی ہمشیرہ ڈاکٹر فوزیہ صدیقی و دیگر سیاسی اور سماجی رہنماﺅں نے شرکت و خطاب کیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے کہا کہ عافیہ کو امریکہ کے حوالے کر دینا پانامہ لیکس میں شائع ہونے والی کرپشن سے کم نہیں ہے۔ حکومت چاہے تو ڈاکٹر عافیہ 24 گھنٹے میں واپس آسکتی ہے۔ وزیراعطم اپنا گرتا ہوا سیاسی گراف عافیہ کو واپس لاکر بہتر کرسکتے ہیں۔ ڈاکٹر عافیہ کو تین معصوم بچوں سمیت اغواءکر کے امیریکہ کے حوالے کیا جانا ”اختیاراتی بدعنوانی “ Empowered corruptionکی بدترین مثال تھی جو کہ مالی بدعنوانی سے زیادہ بدترین اور شرمناک ہے جس کا خاتمہ انتہائی ضروری ہے۔ ریاستی نظام کو اس حد تک کمزور کر دیا گیا ہے کہ عدلیہ اور درجنوں سکیورٹی اداروں کی موجودگی میں عافیہ اور اس کے تین کمسن بچوں کو اغواءکر کے سرحد پار دشمن کے حوالے کر دیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ریاستی ادارے مضبوط اور آزاد ہوتے تو عافیہ کو محض جھوٹے الزام کی بنیاد پر بلاتحقیق و تفتیش امریکہ کے حوالے کرنے کی جرات اس وقت کے حکمرانوں کو ہرگز نہیں ہوسکتی تھی ۔ اگر حکمرانوں اور بااختیار افراد کو آئین اور قانون کا تابع بنادیا جائے تو عافیہ کی وطن واپسی کوئی مشکل کام نہیں ہے۔ ڈاکٹر فوزیہ نے مزید کہا کہ عافیہ کی 13 سالہ رہائی اور وطن واپسی کو مہم ہی دراصل ریاستی اداروں کو Auto connectکرنے کے عمل کی بنیاد بنی ہے جس کی تکمیل بے گناہ عافیہ کی وطن واپسی تک ممکن نہیں ہے جس کا ادراک حکمرانوں اور اداروں کو کرنا چاہیے اور اب عافیہ کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں کا ازالہ کر دینا چاہیے ۔پاسبان پاکستان کے صدر الطاف شکور نے کہا کہ وزیراعظم میاں نواز شریف نے تیسری مدت حکمرانی کی ابتداءہی عافیہ کو وطن واپس لانے کے جھوٹے وعدے سے کی تھی اور اب پانامہ لیکس سکینڈل کے معاملے میں مسلسل جھوٹ بولنے کی وجہ سے نواز شریف قوم کا اعتماد اور اخلاقی جواز دونوں ہی کھوچکے ہیں اس لیے اب اداروں کو آگے آکر قوم کی بیٹی عافیہ کو وطن واپس لانے کے اقدامات کرنا چاہیے۔ دیگر مقررین ہیومن رائٹس نیٹ ورک کراچی کے صدر انتخاب عالم سوری ، نعیم الدین ، جماعت اسلامی جمشید زون کے جنرل سیکرٹری بخت علی شاہ ، عبدالشکور حسن زئی ، محمد نواز تنولی ایڈووکیٹ ، نعمان جہانگیر ی اور جلسہ کے شرکاءنے مطالبہ کیا کہ آرمی چیف جنرل راحیل شریف قوم کی بیٹی عافیہ کو وطن واپس لانے کا فریضہ انجام دیں، نواز شریف قوم کا اعتماد کھو چکے ہیں۔

مزید :

کراچی -