سعودی عرب کے مفتی اعظم نے عوام سے سکیورٹی اداروں کے ساتھ تعاون کی اپیل کردی

سعودی عرب کے مفتی اعظم نے عوام سے سکیورٹی اداروں کے ساتھ تعاون کی اپیل کردی
سعودی عرب کے مفتی اعظم نے عوام سے سکیورٹی اداروں کے ساتھ تعاون کی اپیل کردی

  


جدہ (محمد اکرم اسد/ بیورو چیف) سعودی عرب کے مفتی اعظم شیخ عبدالعزیز آل شیخ نے شہریوں اور غیر ملکیوں سے اپیل کی ہے کہ وہ دہشتگردوں کی بیخ کنی کے لئے سکیورٹی اداروں کے ساتھ ہر ممکن تعاون کریں۔ انہوں نے کہا کہ داعش سے وابستہ تخریب کار زمین پر فساد کرنے والے ہیں جن کے خلاف پورے معاشرے کو متحدہونا ہوگا۔ انہوں نے نوجوانوں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فتنہ و فساد کے داعیوں سے ہوشیار رہیں اور دین کا علم ان لوگوں سے لیں جو مستند ہوں۔ دریں اثناءوزارت داخلہ نے کہا کہ شام میں شدت پسند تنظیم داعش کے ساتھ ہزار سعودی عرب کے شہری ہیں جن میں سے 760 شہری ملک میں واپس آگئے ہیں۔ وزارت داخلہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ ملک کی سرزمین پر موجود شدت پسندوں میں کوئی بھی داعش کا رہنما نہیں ہے۔ جنرل منصور الترکی نے کہا ہے کہ تفتیش کے بعد معلوم ہوا ہے کہ شدت پسند سعودی عرب میں بڑی کارروائیاں دراصل شہریوں اور مقیم غیر ملکیوں کے تعاون کا نتیجہ ہے۔سکیورٹی اداروں نے جن شدت پسندوں کو گرفتار کیا ہے یا پیشگی کارروائی کی ہے ان میں سے 70فیصد کے بارے میں معلومات شہریوں یا غیر ملکیوں نے دی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شدت پسند تنظیم سعودی عرب میں اپنے کارندوں کو انٹرنیٹ کے ذریعے احکامات دیتی ہے۔ ہماری کوشش ہے کہ شدت پسندوں کو انٹرنیٹ کی سہولت سے محروم کردیا جائے۔

مزید : عرب دنیا