پاکستان میں ٹیکسیشن اور کارپورٹ لاء کے لیے پہلی موبائل ایپلیکیشنز کا اجرا

پاکستان میں ٹیکسیشن اور کارپورٹ لاء کے لیے پہلی موبائل ایپلیکیشنز کا اجرا

  

لاہور(پ ر) پاکستان کے ایک نجی ادارے " ایس ایم ریحان اینڈ کمپنی، چارٹرڈ اکاؤنٹینٹس" نے ملکی تاریخ میں پہلی بار ٹیکسیشن اور کارپوریٹ لاء کے لیے چار موبائل ایپلیکیشنزمتعارف کرائی ہیں۔ایک بار ایپلیکیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے بعد کسی انٹر نیٹ کنکشن کی ضرورت نہیں ہے اور اس میں ایک سال کے فری اپ ڈیٹس بھی شامل ہیں۔چیف کمشنر آر ٹی اوII، فیڈرل بورڈ آف ریونیو، کراچی ،ڈاکٹر محمد طارق مسعود نے کہا کہ" مجھے یہ تسلیم کرتے ہوئے خوشی ہے کہ ایس ایم ریحان اینڈ کمپنی کی طرف سے متعا رف کرائی جانے والی موبائل ایپلیکیشنز بہترین اور وقت کی ضرورت ہیں" ۔ انھوں نے مزید کہا کہ" یہ اپلیکیشنزدوسروں کی رہنمائی کریں گی اور ٹیکسیشن اور موبائل ایپلیکیشنزکو باہم ملانے میں مدد دیں گی۔مجھے امید ہے کہ یہ ایپلیکیشنز ایک طرف تو عام لوگوں اور پروفیشنلز کے مسائل کم کریں گی اوردوسری طرف ان سے عام توقعات کو پورا کرنے میں مدد ملے گی" ۔

کمپنی کے سی ای او، ایس ایم ریحان نے ان موبائل ایپلیکیشنز کے پیچھے کار فرما تصور کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ عملی چارٹرڈ اکاؤنٹینٹس کی حیثیت سے ہمیں عام لوگوں کو درپیش مسائل کا بخوبی علم تھا۔ریبیٹس ،فکسڈ ٹیکس، فائنل ٹیکس،نارمل ٹیکس اور ود ہولڈنگ ٹیکس کی جمع تفریق کی پیچیدہ ورکنگ کی وجہ سے ایک عام آدمی اپنی انکم ٹیکس کی ذمہ داری کا تعین نہیں کر سکتا۔فائیلر اور نان فائیلر کے مسئلہ نے بھی اسے الجھا رکھا ہے ، چنانچہ اس کے کسی سادہ اور آسان حل کی ضرورت تھی، ان موبائل ایپلیکیشنز کے ذریعے ان تمام مسائل کو بہت سہل طریقے سے حل کر دیا گیا ہے۔موبائل ایپلیکیشن ٹیکس کیلکولیٹر کا آئیڈیا ،اس بات کو ذہن میں رکھ کر متعارف کرایا گیا ہے کہ عام لوگوں کو آسانی ہو اور وہ ٹیکس کے بارے میں کنسلٹینٹس کی خدمات حاصل کرنے سے بچ جائیں،اس سے کاروباری فیصلہ سازی میں بھی مدد ملے گی۔

مزید :

کامرس -