پیوٹن نے مجھے نقصان پہنچانے کیلئے صدارتی انتخاب میں مداخلت کی،ایف بی آئی کے خط اور وکی لیکس نے ووٹرز کو ڈرایا:ہیلری کلنٹن ،روسی صدر نے الزامات کو سیاسی قرار دے دیا

پیوٹن نے مجھے نقصان پہنچانے کیلئے صدارتی انتخاب میں مداخلت کی،ایف بی آئی کے ...
پیوٹن نے مجھے نقصان پہنچانے کیلئے صدارتی انتخاب میں مداخلت کی،ایف بی آئی کے خط اور وکی لیکس نے ووٹرز کو ڈرایا:ہیلری کلنٹن ،روسی صدر نے الزامات کو سیاسی قرار دے دیا

  

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن)امریکی ڈیمو کریٹو پارٹی کی سربراہ ہیلری کلنٹن نے کہاہے کہ میں نے صدارتی انتخابات میں ڈونلڈ ٹرمپ سے 30لاکھ ووٹ زیادہ  لئے،  روسی صدرنے مجھے نقصان پہنچانے کیلئے صدارتی انتخاب میں مداخلت کی جبکہ ایف بی آر کے خط اور وکی لیکس نے ووٹر ز کو ڈرا دیا تھا،دوسری طرف روسی صدر نے اس الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے  امریکی انتخابات میں کوئی مداخلت نہیں کی ،الزام صرف سیاسی بنیادوں پر لگائے جا رہے ہیں ۔  

دنیا کا کوئی وزیراعظم ٹویٹ کا جواب نہیں دیتا، نوٹیفکیشن انٹرنل تھا،وضاحت چوہدری نثار کریں گے:ڈاکٹر مصدق ملک

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق ہیلری کلنٹن کا کہنا تھا کہ ٹرمپ انتظامیہ کوخواتین کے مسائل حل کرنے چاہئیں، میرے ساتھ صدارتی انتخاب میں خاتون ہونے پرتفریقی رویہ اختیارکیاگیا، اسی وجہ سے میں صدارتی مہم سے متعلق کتاب لکھ رہی ہوں جبکہ عالمی سطح پر بھی خواتین سے تفریقی رویہ اختیار کیا جارہاہے ،21ویں صدی میں خواتین کے حقوق بڑا مسئلہ ہیں جبکہ اداروں میں خواتین کوتنخواہ مردوں کی تنخواہ سےکم دی جاتی ہیں ۔انہوں نے کہاکہ شمالی کوریاکوممکنہ ایٹمی تجربے کی قیمت چکانے کااحساس دلایاجائے،چین یا جاپان کے ذریعے شمالی کوریا پر دباو ڈالانہیں جا سکتا،یہی نہیں ایران کاپلاٹونیم پروگرام بھی مذاکرات کے ذریعے ختم کرایاجائے۔ہیلری نے دعویٰ کیا کہ روسی صدرنے مجھے نقصان پہنچانے کیلئے صدارتی انتخاب میں مداخلت کی اورایف بی آئی کے خط اور وکی لیکس نے ووٹرز کو ڈرایا۔صدارتی انتخاب میں ٹرمپ سے30لاکھ ووٹ زیادہ لئے لیکن چند گھنٹے میں انتخاب نتائج تبدیل ہوئے۔دوسری طرف روسی صدر ولادی میر پیوٹن نے اس الزام کی تردید کی  ہے کہ روس نے گذشتہ سال کے امریکی صدارتی انتخاب میں مداخلت کی تھی۔ اُنھوں نے کہا ہے کہ یہ الزام محض افواہیں ہیں، جنھیں امریکہ میں سیاسی بنیادوں پر لگایا جا رہا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -