انوائر مینٹل اور ہارٹیکلچر سو سائٹی کے زیر اہتمام یو ای ٹی میں سیمینار

انوائر مینٹل اور ہارٹیکلچر سو سائٹی کے زیر اہتمام یو ای ٹی میں سیمینار

  

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر) انوائر مینٹل اور ہارٹیکلچر سو سائٹی کے زیر اہتمام یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی لاہور میں گیار ھویں کُل پاکستان ماحولیاتی آرٹ کی دو روزہ نمائش کا افتتاح کر دیا گیاہے۔ نمائش میںیو ای ٹی لاہور سمیت40 سے زائد جامعات نے اپنے ماڈل ،مجسمے، تصاویر اور سکیچنگ سمیت شرکت کی۔ نمائش کا مقصد انسانی ماحول پر ٹیکنالوجی کے اثرات کو اجاگر کرنا ہے۔اس نما ئش میں مختلف موضو عات ''دی سن رائز'' انڈر دی اوشن، ''دی ارتھ وھزئپر'' اور''اولڈ فولک نیچر ''کے ماڈلز کی نمائش کی گئی اس موقع پر وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر فضل احمد خالد نے کہا کہ بہترین ماحول کسی بھی معاشرے کا آئنیہ دار ہوتا ہے جسکی وجہ سے افراد کی صحت مند زندگی کا باخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے ۔ موجودہ دور میں صنعت کے فروغ کے ساتھ ساتھ ماحول کیلئے تشویش ناک صورت حال بھی پیدا ہو رہی ہے جس کے سدباب کیلئے ماحول دوست ٹیکنالوجی کو بروئے کار لاتے ہوئے ماحول کو تحفظ بھی فراہم کیا جا سکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ بحیثت قوم ہم اپنے ملک کو گندگی اور غلاظت سے صاف رکھتے ہوئے خوشگوار ماحول پیدا کریں تاکہ بیماریوں سے بچا جاسکے اور لوگ تندرست رہ کر ملک و قوم کی ترقی میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں سکیں وائس چانسلر نے طلبہ و طالبات کی تخلیقی سوچ اور اس کے مظاہرے کو سراہتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ ماحول سے متعلق آگہی کے پروگرامز مزید منعقد کیے جائیں تاکہ پاکستان سے آلودگی کو کم کیا جائے اور فنی تکنیکی مہارتیں متعارف کروائی جا سکیں۔ سوسائٹی کے کوآرڈینٹر محمد حماد رسول اور اورنگزیب عباسی نے شرکا ء کو نمائش کے متعلق مکمل طور پر بریف کیا۔ اس موقع پر سول انجینرنگ کے ڈین پروفیسر ڈاکٹرعبدالستار شاکر،انوائرمینٹل اور آرکیٹیکچر سوسائٹی کی اصلاح کار پروفیسر ڈاکٹر نیلم ناز، ڈائریکٹر سٹوڈئنس افیئر پروفیسر ڈاکٹرآصف علی قیصر اور طلبہ کی کثیر تعداد موجود تھی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -