’گھر سے کام کرنے‘ کی پالیسی کا اعلان،نوٹیفکیشن جاری

’گھر سے کام کرنے‘ کی پالیسی کا اعلان،نوٹیفکیشن جاری
’گھر سے کام کرنے‘ کی پالیسی کا اعلان،نوٹیفکیشن جاری

  

کراچی (ویب ڈیسک) وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی میں تعینات خواتین افسران کی حوصلہ افزائی اور سہولت کے پیش نظر وزیر مملکت برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی انوشہ رحمٰن نے ”گھر سے کام کرنے“ کی پالیسی کا اعلان کیا ہے۔ پالیسی کے تحت خواتین افسران ہفتے میں ایک دن گھر بیٹھ کر دفتری امور سرانجام دے سکیں گی۔ یہ سہولت خواتین افسران کا استحقاق شمار نہیں ہوگی۔ یہ سہولت خواتین افسران کی سہولت کے لئے متعارف کرائی جا رہی ہے اس دوران خواتین افسران اپنے اپنے متعلقہ شعبہ جات سے مستقل رابطے میں رہیں گی۔ سہولت کا اطلاق اس صورت میں منسوخ تصور ہوگا جب افسر کی موجودگی کسی اہم میٹنگ / کانفرنس میں ضروری سمجھی جائے گی۔

انوشہ رحمٰن نے کہا کہ ”گھر سے کام کرنے کی“ پالیسی وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی کا ایک منفرد اقدام ہے جس کا مقصد خواتین افسران کو بہترین سہولت فراہم کرنا ہے تاکہ وہ اپنے امور خوش اسلوبی اور دلجمعی کے ساتھ انجام دے سکیں۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی میں تعینات خواتین افسران اس سہولت کا استعمال ذمہ دارانہ طریقے سے کریں گی اور اپنی کارکردگی میں مزید بہتری لائیں گی۔ وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی نے اس سلسلے میں باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا ہے۔

’سشمیتاسین کیساتھ تعلقات قائم کرنے کی وجہ سے میری شادی ختم ہوگئی‘بھارتی فلمساز نے شرمناک راز بے نقاب کردیا

مزید :

کراچی -