ائیرپورٹ پر مذہبی سکالر نے مسافر خواتین کی تصاویر بنا کر ان کے ساتھ ایسی شرمناک ترین حرکت کردی کہ ہنگامہ برپا ہو گیا، کیا کیا؟ جان کر آپ کو بھی بے حد افسوس ہوگا

ائیرپورٹ پر مذہبی سکالر نے مسافر خواتین کی تصاویر بنا کر ان کے ساتھ ایسی ...
ائیرپورٹ پر مذہبی سکالر نے مسافر خواتین کی تصاویر بنا کر ان کے ساتھ ایسی شرمناک ترین حرکت کردی کہ ہنگامہ برپا ہو گیا، کیا کیا؟ جان کر آپ کو بھی بے حد افسوس ہوگا

  

کنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) آسٹریلیا میں ایک مذہبی سکالر نے ایئرپورٹ پر مسافر خواتین کی تصاویر بنا کر ان کے ساتھ ایسی شرمناک حرکت کر دی کہ جان کر ہر مسلمان کو بے حد افسوس ہو گا۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق شیخ زید السلامی نامی یہ سکالر سڈنی ایئرپورٹ پر اترے اور مسافر خواتین کی تصاویر بنا کر واٹس ایپ پر اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کرتے رہے اور ان کے متعلق انتہائی فحش اور نازیبا گفتگو کرتے رہے۔ ایک خاتون کی تصویر کے ساتھ انہوں نے لکھا کہ ”میں قسم کھا کر کہتا ہوں کہ اس نے زیرجامہ نہیں پہن رکھا۔یہ میرے ساتھ بیٹھ کر آئی ہے۔ جہاز میں ہر شخص اسے دیکھ رہا تھا اور یقینا وہ مجھے خوش قسمت سمجھ رہے ہوں گے۔“

’ٹیکسی ڈرائیور نے مجھ سے یہ شرمناک سوال پوچھا تو میں نے اسے ڈانٹ دیا، اس پر اس نے گھر سے دور ہی گاڑی روکی اور کہنے لگا۔۔۔‘ نوجوان پاکستانی لڑکی نے ایسا واقعہ سنادیا کہ جان کر ہی پاکستانی لڑکیاں ٹیکسی میں سفر کرنے سے پہلے بار بار سوچنے پر مجبور ہوجائیں

سکالر نے خواتین کے تصاویر کے متعلق واٹس ایپ گروپ میں اپنے دوستوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ ”جب جہاز میں کوئی لڑکی میرے ساتھ بیٹھ جاتی ہے تو میں بہت بے سکون ہو جاتا ہوں۔ تمام راستے مجھے یوں محسوس ہوتا ہے جیسے میرے جسم میں زہر پھیل رہا ہو۔ “ جواب میں سکالر کے دوست بھی ان تصاویر کے متعلق ناگفتہ بہ گفتگو کرتے رہے اور انہیں بھانت بھانت کے مشورے دیتے رہے کہ تمہیں یہ کرنا چاہیے تھا اور اب یہ کرنا چاہیے۔ واضح رہے کہ شیخ زید السلامی آسٹریلوی ریاست نیو ساﺅتھ ویلز کے شہر گرینوائل میں واقع اسلامک سنٹر سے وابستہ ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -