موبائل فونز کے استعمال کی وجہ سے اس ایک قسم کے کینسر میں ہوشربا اضافہ ہوگیا ہے، سائنسدانوں نے سب سے خوفناک انکشاف کردیا

موبائل فونز کے استعمال کی وجہ سے اس ایک قسم کے کینسر میں ہوشربا اضافہ ہوگیا ...
موبائل فونز کے استعمال کی وجہ سے اس ایک قسم کے کینسر میں ہوشربا اضافہ ہوگیا ہے، سائنسدانوں نے سب سے خوفناک انکشاف کردیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

بوسٹن(نیوز ڈیسک) موبائل فون آج ہماری زندگی کا لازمی جزو بن گیا ہے۔ اپنوں کے ساتھ رابطے سے لے کر کاروباری مقاصد تک کے لئے ہر جگہ اور ہر وقت اس کی ضرورت محسوس ہوتی ہے۔ نوجوان نسل تو سوتے وقت بھی اسے خود سے دور نہیں کر سکتی، لیکن کہیں ایسا تو نہیں کہ زندگی کا یہ جزو لازم موت کا پیغام بھی ثابت ہو رہا ہے؟ برطانیہ کے کچھ سائنسدانوں کا یہی خیال ہے جنہوں نے دماغ کے کینسر کی بڑھتی ہوئی شرح کا تعلق موبائل فون کے استعمال سے جوڑ دیا ہے۔

میل آن لائن کے مطابق انگلینڈ میں کینسر کے اعدادو شمار ظاہر رکرتے ہیں کہ دماغ کے کینسر کی مہلک قسم ’گلائیو بلاسٹوما ملٹی فارم‘ کے مریضوں کی تعداد 1995ءمیں انگلینڈ میں 983 تھی جبکہ 2015ءمیں یہ تعداد 2531 تک پہنچ چکی ہے۔ حالیہ تحقیق میں دماغ کے کینسر کے کل 79ہزار 241 کیسوں کا جائزہ لیا گیا ہے، جو کہ گزشتہ 21 سالوں کے دوران سامنے آئے تھے۔ سائنسی جریدے ’جرنل آف پبلک ہیلتھ اینڈ انوائرنمنٹ میں اب اس تحقیق کے نتائج شائع کر دئیے گئے ہیں۔ انہی نتائج کی بناءپر تحقیق کاروں نے بتایا ہے کہ موبائل فون اور کورڈ لیس فون کا بڑھتا ہوا استعمال دماغ کے کینسر کی اس مخصوص قسم میں اضافے کا بنیادی سبب ہے۔

اگرچہ حالیہ تحقیق میں کینسر کے کیسز کی ایک بڑی تعداد کا مطالعہ کیا گیا لیکن اس کے باوجود ادارے ’کینسر ریسرچ یوکے‘نے اس کے نتائج سے اختلاف کیا ہے۔ اس ادارے کا موقف ہے کہ اس بات کے سائنسی شواہد بہت کم ہیں کہ موبائل فون کے استعمال سے دماغ کا کینسر ہوسکتا ہے اور یہ کہ اس ضمن میں مزید تحقیق کی ضرورت ہے ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /تعلیم و صحت