’ایک یہودی سب سے سود لے سکتا ہے لیکن دوسرے یہودی سے نہیں۔۔۔‘ یہودیوں کے اماموں نے سود پر قرضہ دینے والی کمپنی کے خلاف بہت بڑا ’فتویٰ‘ جاری کردیا، حرام قرار دے دیا کیونکہ۔۔۔

’ایک یہودی سب سے سود لے سکتا ہے لیکن دوسرے یہودی سے نہیں۔۔۔‘ یہودیوں کے ...
’ایک یہودی سب سے سود لے سکتا ہے لیکن دوسرے یہودی سے نہیں۔۔۔‘ یہودیوں کے اماموں نے سود پر قرضہ دینے والی کمپنی کے خلاف بہت بڑا ’فتویٰ‘ جاری کردیا، حرام قرار دے دیا کیونکہ۔۔۔

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) یہودیوں کی سود خوری مثل کے طور پر مشہور ہے لیکن آپ بھی یہ جان کر حیران ہوں گے کہ یہودی ساری دنیا سے سود کھا سکتا ہے مگر کسی دوسرے یہودی سے سود خوری کی اسے اجازت نہیں۔ دراصل امریکا میں یہودیوں کی طاقتور مذہبی تنظیم ’اگوادات اسرائیل آف امریکہ‘ کی جانب سے گزشتہ ہفتے ایک فتوٰی جاری کیا گیا ہے جس کے بعد سے اس معاملے نے امریکی میڈیا میں ہلچل برپا کر رکھی ہے۔ اس فتوے کے نتیجے میں امریکا کے مشہور مالیاتی ادارے ’کوئیکن لونز‘ سے قرض لینے والے قدامت پسند یہودیوں کے لئے بڑی مصیبت کھڑی ہوگئی ہے۔

یہودی پیشواﺅں کی تنظیم اگوادات اسرائیل آف امریکہ کی جانب سے جاری کئے گئے فتوے میں کہا گیا ہے کہ ڈیٹرائٹ سے تعلق رکھنے والی کمپنی ’کوئیکن لونز‘ سے قرض لینا حرام ہے کیونکہ اس کے حصص کی غالب تعداد یہودیوں کے پاس ہے۔ دوسرے لفظوں میں یہ کہا جا سکتا ہے کہ سود پر قرض دینے والی اس کمپنی کی ملکیت یہودیوں کے پاس ہے اور اگر کوئی یہودی اس سے سود پر قرض لیتا ہے تو یہ یہودی مذہبی قانون کی خلاف ورزی ہو گی۔

کوئیکن لونز امریکہ کی سب سے بڑی مارگیج کمپنی ہے جبکہ راکٹ مارگیج نامی مالیاتی کمپنی بھی اسی کی ملکیت ہے۔ چونکہ فتوے میں کہا گیا ہے کہ یہودی مذہبی قانون کے مطابق کسی یہودی کے لئے حلال نہیں کہ وہ کسی دوسرے یہودی سے سود وصول کرے تو اس کمپنی کے ساتھ اس کے یہودی کسٹمرز کے لئے بھی ایک عجیب صورتحال پیدا ہو گئی ہے۔ فتوے کے مطابق یہودی سود کا کاروبار تو کرسکتے ہیں لیکن وہ صرف ان لوگوں سے سود وصول کرسکتے ہیں جو غیر یہودی ہوں۔ اس فتوے میں گھر کی خریداری کے لئے مارگیج کی سہولت حاصل کرنے والے یہودیوں کو خبردار کر دیا گیا ہے کہ وہ کسی ایسی کمپنی کی خدمات مت حاصل کریں جس کے مالکان یہودی ہوں۔

مزید :

بین الاقوامی -