کورونا وائرس ازخود نوٹس کیس،وزارت صحت نے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کروادی

  کورونا وائرس ازخود نوٹس کیس،وزارت صحت نے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کروادی

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس از خود نوٹس کیس کی سماعت چار مئی کو سپریم کورٹ میں ہو گی،جس کیلئے وزارت صحت نے اپنی ایک اہم رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کروا دی ہے۔سپریم کورٹ میں جمع کروائی گئی رپورٹ میں وزارت صحت کا کہنا ہے کہ اسلام اباد میں ایک ارب 30 کروڑ کی لاگت سے نیا آئیسولیشن ہسپتال تعمیر کیا جائیگا۔ آئیسولیشن ہسپتال کی تعمیر کا آغاز 26مارچ سے ہوا، تکمیل 5 مئی تک متوقع ہے۔رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ آئیسولیشن ہسپتال میں مشتبہ مریضوں کیلئے تمام سہولیات موجود ہوں گی۔ وفاقی حکومت نے ڈاکٹر اور پیرامیڈیکل سٹاف کیلئے خصوصی مالی پیکیج کی منظوری دی۔وزارت صحت کی رپورٹ کے مطابق ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکل سٹاف کو ایک بنیادی تنخواہ اضافی دی جائیگی۔ وفاقی حکومت نے فرنٹ لائن پرکام کرنیوالوں کیلئے شہداء پیکیج کا اعلان بھی کیا ہے۔رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ حاجی کیمپ میں بنائے گئے قرنطینہ سینٹرمیں چین میں پھنسے طلبہ کو واپسی پر رکھا جانا تھا۔ حکومت نے بعد میں فیصلہ تبدیل کر کے حاجی کیمپ میں بنکاک اورافریقہ سے آنیوالے مسافروں کو رکھا۔ حاجی کیمپ کا یہ قرنطینہ سینٹر 24 اپریل کو کامسیٹس یونیورسٹی منتقل کیا گیا۔

وزارت صحت رپورٹ

مزید :

صفحہ اول -