کرونا سے جاں بحق2افراد کے اہلخانہ کے تاحال ٹیسٹ نہ ہو سکے

  کرونا سے جاں بحق2افراد کے اہلخانہ کے تاحال ٹیسٹ نہ ہو سکے

  

لاہور(جنرل رپورٹر) سروسز ہسپتال کے ٹیکنیشن کے والدین کی کورونا سے موت کے باوجودان کے دیگر گھر والوں کے ٹیسٹ نہ ہو سکے اور نہ ہی ان کو ابھی تک آئیسو لیٹ کیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق سروسز ہسپتال میں دو ای سی جی ٹیکنشن محسن اور آصف کی ڈیوٹی کورونا وارڈ کے مریضوں کی ای سی جی پر لگائی گئی دونوں ای سی جی ٹیکنشن یکے بعد دیگرے کورونا میں مبتلا ہو گئے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ کئی روز تک ان دونوں ملازمین کے ٹیسٹ نہ کروائے گئے اور نہ ہی انہیں آئیسو لیٹ کیا گیا اور نہ ہی ان کے گھر والوں کو مفت کورونا ٹیسٹ کی سہولت فراہم کی گئی۔اس دوران آصف اور محسن کے ٹیسٹ پازٹیو آنے کے بعد انہیں تو آئیسو لیٹ کردیا گیا مگر ان کی رہائش اور اس کے ارد گرد کے لوگوں کو انڈر آبزرویشن رکھا گیا اور نہ ہی ان کے ٹیسٹ لئے گئے اس دوران آصف کے ماں اور باپ دونوں کی طبیعت اچانک بگڑ گئی ہسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ دونوں میں کورونا وائرس کی علامات پائی گئیں اور یکے بعد دیگرے آصف کے باپ اور پھر ماں بھی زندگی کی بازی ہار گئے۔ملازمین کا کہنا ہے کہ یہ غفلت کا نتیجہ ہے اگر دونوں کے گھر والوں کے ٹیسٹ کئے جاتے اور انہیں ہسپتال داخل کیا جاتا توان کی قیمتی زندگیاں بچ سکتی تھیں۔

کرونا ٹیسٹ

مزید :

صفحہ آخر -