گلوکاراستاد فدا حسین لاہور کے مقامی قبرستان میں سپرد خاک

گلوکاراستاد فدا حسین لاہور کے مقامی قبرستان میں سپرد خاک

  

لاہور(فلم رپورٹر)گلوکاراستاد فدا حسین کو لاہور کے مقامی قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا ہے جن کی نماز جنازہ میں میوزک انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے بہت سے افراد نے بھی شرکت کی۔فدا حسین 68 سال کی عمر میں گزشتہ روز انتقال کرگئے تھے فدا حسین نے ریڈیو،ٹی وی اور فلموں کے لئے بہت سے گیت گائے۔فدا حسین غلام علی کے شاگرد بھی تھے جنہوں نے موسیقی کی تمام اصناف میں گائیکی کا مظاہرہ کیا بیٹے مسرت عباس نے بھارت میں مقابلے میں شہرت کے بعد پاکستان میں بھی کامیابی حاصل کی۔انہوں نے علامہ اقبال،محسن نقوی، قتیل شفائی اور احمد فراز سمیت پاکستان کے کئی نامور شعرا کا کلام گایا۔استاد فدا حسین نے انٹرویو میں حکومت سے اپیل کی تھی کہ انہیں پرائیڈ آف پرفارمنس دیا جائے۔

کیونکہ انہوں نے پچاس سال اس شعبے کی خدمت کی ہے۔فدا حسین نے کئی سال پہلے دورہ بھارت کے دوران جیا بہادری کی خواہش پر ان کے بچوں کی سالگرہ پر ہونے والی تقریب میں فن کا مظاہرہ کیا جبکہ ان کی ملاقات آر ڈی برمن،لتا منگیشتکر اور آشا بوسلے سمیت بھارت کے نامور گلوکاروں سے بھی ہوچکی ہے جو ان کے فن کے معترف رہے۔میوزک انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے بہت سے افراد نے ان کی وفات پر تعزیت کا اظہار کیا ہے۔

مزید :

کلچر -