بیرون ملک سے آنیوالے مسافر ٹیسٹوں کے بغیر ہوٹلوں، قرنطینہ میں قید

بیرون ملک سے آنیوالے مسافر ٹیسٹوں کے بغیر ہوٹلوں، قرنطینہ میں قید

  

ملتان (سپیشل رپورٹر) ضلعی انتظامیہ نے متحدہ عرب امارات سے واپس آنے والے درجنوں مسافروں کو کرونا ٹیسٹ کرائے بغیر ہوٹلوں اور قرنطینہ سنٹر میں قید کر دیا،جبکہ دیگر مسافر لوں کے کرونا ٹیسٹ کے رزلٹ نیگیٹو آنے کے باوجود انہیں ہوٹل میں رہنے پر مجبور(بقیہ نمبر9صفحہ6پر)

کیا جا رہا ہے،مسافروں کے مطابق ہوٹل مالکان کی طرف سے ایک یوم کا تین ہزار روپے کرایہ جبکہ اے سی چلانے پر چار ہزار روپے وصول کیا جا رہا ہے،مسافروں کا کہنا ہے کہ انہیں ہوٹل سے باہر جانے کی بھی اجازت نہیں ہے اور پولیس والوں کی طرف سے ان کے ساتھ بدسلوکی کی جاتی ہے،ہوٹل انتظامیہ کی طرف سے صفائی کے بھی انتظامات ٹھیک نہیں ہیں دو دو دن تک کوئی صفائی کرنے نہیں آتا،سحری اور افطاری کا بھی کوئی انتظام موجود نہیں ہے،سو سے زائد مسافروں کو مختلف ہوٹلوں میں رکھا ہوا ہے جن کا تعلق مظفرگڑھ،ڈیرہ غازی خان، بہاولپور اور دیگر علاقوں سے ہے،مسافروں کا کہنا ہے کہ وہ کرائے بھر بھر کر تنگ آ چکے ہیں وزیراعظم پاکستان سمندر پار سے آئے پاکستانیوں کے ساتھ ہونے والے اس سلوک کا نوٹس لیں اور دادرسی کی جائے۔

قید

مزید :

ملتان صفحہ آخر -