صحافی سچ کا سفر جاری رکھیں،مفاد پرستوں کی وجہ سے ہمیں جھوٹا سمجھا جاتا ہے۔ناصر زیدی

صحافی سچ کا سفر جاری رکھیں،مفاد پرستوں کی وجہ سے ہمیں جھوٹا سمجھا جاتا ...

  

ملتان (اے پی پی)آزادی صحافت کے لئے کوڑے کھانے والے ملتان کے صحافی ناصر زیدی نے کہاہے کہ صحافت کو آج جو بھی آزادی میسر ہے اس کے پیچھے صحافیوں کی ایک طویل جدوجہد شامل ہے۔ پیشہ ورصحافی آج بھی سچ کی تلاش میں رہتا ہے لیکن صحافت کے ساتھ منسلک ہونے والے بعض مفاد پرستوں کی وجہ سے صحافیوں کو جھوٹا سمجھا جانے لگا۔ان خیالات کااظہار انہوں نے عالمی یوم آزادی صحافت کے حوالے سے اے پی پی کے ساتھ بات چیت کے دوران کیا۔یہ(بقیہ نمبر36صفحہ6پر)

دن دنیا بھر میں 3مئی کومنایا جارہاہے۔ ناصر زیدی نے بتایا کہ13مئی 1978ء کو مجھے کوٹ لکھپت جیل لاہور میں مسعود اللہ خان اورخاور نعیم ہاشمی کے ساتھ کوڑے لگائے گئے تھے۔یہ سزا اسی روز ہمیں سنائی گئی اورآدھے گھنٹے بعد ہی اس پرعملدرآمد ہوگیا۔انہوں نے کہاکہ ہم اس وقت نوجوان تھے، پرجوش تھے اور آئیڈیلسٹ تھے۔ یہ آئیڈیلزم آج بھی ہم میں موجودہے۔انہوں نے کہاکہ آج صحافت بہت سے مسائل کاشکارہے۔جدید رجحانات کی وجہ سے صحافت کے ذرائع تبدیل ہوگئے ہیں۔سوشل میڈیا اور الیکٹرانک میڈیا نے اخباری صحافت کو عملاً ختم کردیا ہے۔بہت سے صحافی بے روزگار ہوچکے ہیں لیکن صحافتی تنظیمیں ان کی داد رسی نہیں کرسکیں۔انہوں نے کہاکہ کل اورآج کی صحافت میں فرق یہ ہے کہ کل کے لوگ سچ کو صحافت سمجھتے تھے اور تنخواہ کی پرواہ نہیں کرتے تھے۔آج صحافت صنعت بن چکی ہے اورزیادہ تنخواہ والوں کوہی کامیاب صحافی سمجھا جاتا ہے۔ناصر زیدی نے کہاکہ آج کے دن کا پیغام یہ ہے کہ صحافی قلم کی حرمت، سچائی اور آزادی رائے کیلئے جدوجہد جاری رکھیں۔ یہ جدوجہد کبھی رائیگاں نہیں جائے گی۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -