ویلفیئر فنڈ سے فراہم کی جانے والی افطار ڈنر ایس ایچ او ہڑپ کرنے لگا

ویلفیئر فنڈ سے فراہم کی جانے والی افطار ڈنر ایس ایچ او ہڑپ کرنے لگا

  

کراچی(این این آئی)آرٹلری میدان پولیس اہلکاروں کے لیئے ویلفئر فنڈ سے فراہم کی جانے والی افطار ڈنر روزانہ کی بنیاد پر ایس ایچ او ہڑپ کرنے لگا، روزے کی حالت میں میٹروپول پر فرائض انجام دینے والے اہلکار ناقص افطار کرنے پر مجبور ہوگئے۔ ایس ایچ او کے ناروا سلوک سے اہلکار سخت پریشان حال ہوگئے غیر قانونی احکامات کی پاسداری نہ کرنے پولیس اہلکاروں کو سخت آزمائش کا سامنا ہے۔تفصیلات کے مطابق آرٹلری میدان پولیس اہلکاروں کے لیئے کورونا وبا میں فرائض انجام دینا سخت مشکل ہوگیا ہے، زرائع کے مطابق ایس ایچ او آرٹلری میدان اپنے جوانوں کے لیئے جلاد بن گیا ہے جو پولیس ویلفئر فنڈ سے فراہم کی جانے والی افطار ڈنر سے اپنے اہلکاروں کو محروم کردیا ہے روزانہ کی بنیاد پر آنے والی افطار ڈنر ایس ایچ او ہڑپ کر رہا ہے، پولیس اہلکاروں نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ روزانہ مخیر حضرات اور پاکستان نیوی کی طرف سے سڑک پر آنے جانے والے شہریوں کو افطار تقسیم کرنے آتے ہیں جو پولیس اہلکاروں کو بھی افطار دینا چاہتے ہیں لیکن ظالم ایس ایچ او نے سختی سے اہلکاروں کو افطاری لینے سے منع کررکھا ہے اور اہلکاروں کو افطار لینے پر معطل کرنے کی دھمکی دے رکھی ہے پولیس اہلکار روزے کی حالت میں اپنے فرائض دیتے ہیں جنہیں پولیس ڈیپاررٹ کی جانب سے انتہائی ناقص افطاری دی جارہی ہے جس میں ایک سخت قسم کی روٹی، ایک کیلا اور ایک سموسہ شامل ہے، ایک پولیس اہلکار نے بتایا کہ تھانہ پولیس نے اپنی حدود میں آپریشن کے دوران ناقص معیار کا تیار کردہ جعلی جوس بڑی تعداد میں برآمد کیئے ہیں اور اسی برآمد شدہ ناقص جوس میں سے ایک ایک جوس ایلکاروں میں تقسیم ہورہا ہے اور ناقص افطاری کے سامان سے اہلکاروں کا پیٹ اور جلد کی بیماریاں لاحق ہوگئی ہیں اہلکاروں کا کہنا ہے کہ ہمارے ساتھ ہونے والی ناانصافی پر ہم خود مکمل طور پر بے بس ہیں کیونکہ آواز اٹھانے پر انتقامی کارروائی کا نشانہ بنا دیا جائے گا اس لیئے انتہائی مجبوری کی حالت میں ناقص افطار کرنے پر مجبور ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -