پروگرام کون بنے گا کروڑ پتی کو فراڈیوں نے لوٹ لیا، کروڑوں روپے کا چونا لگا دیا

پروگرام کون بنے گا کروڑ پتی کو فراڈیوں نے لوٹ لیا، کروڑوں روپے کا چونا لگا دیا
پروگرام کون بنے گا کروڑ پتی کو فراڈیوں نے لوٹ لیا، کروڑوں روپے کا چونا لگا دیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) 1998ءمیں برطانیہ میں ایک ٹی وی شو شروع کیا گیا جس کا نام ’ہو وانٹس ٹو بی اے ملینئر‘ (Who wants to be a millionaire)ہے۔ بعد ازاں امریکہ اور بھارت سمیت کئی ممالک میں اس شو کی نقل کی گئی۔ بھارت میں امیتابھ بچن کا ’کون بنے گا کروڑ پتی‘ شو اسی کی نقالی ہے۔ اب اس شہرہ آفاق شو کی انتظامیہ نے ایک ایسا حیران کن انکشاف کر ڈالا ہے کہ ہر سننے والا سر تھام کر بیٹھ گیا۔ میل آن لائن کے مطابق انتظامیہ نے اعتراف کیا ہے کہ ایک گینگ انہیں بے وقوف بناتا رہا اور شو کے مہمانوں کو سوالوں کے جوابات بتا کر اس سے انعامی رقم میں سے حصہ لیتا رہا۔ اب تک یہ گینگ 50لاکھ پاﺅنڈ کی رقم حاصل کر چکا تھا۔

رپورٹ کے مطابق انتظامیہ نے بتایا ہے کہ ”اس منظم گروہ نے اپنے لوگ آئی ٹی وی کے اس شو میں بھرتی کروا رکھے تھے جو دستاویزات تک رسائی حاصل کرتے اور تحقیق کاروں کے تیار کردہ سوال اور جوابات دیکھ کر گینگ کو پہنچاتے۔ یہ گینگ رقم کے عوض یہ جوابات شو کے شرکاءکو بتاتا تھا۔ شو میں شرکت سے قبل امیدواروں سے کچھ سوال کیے جاتے ہیں اور یہ مرحلہ جیتنے والا امیدوار ہاٹ سیٹ پر بیٹھتا ہے۔ یہ گینگ اس مرحلے کو پاس کروانے کی فیس 500پاﺅنڈ لیتا تھا۔ اس کے بعد جب امیدوار ہاٹ سیٹ پر بیٹھ جاتا تو وہ ’فون اے فرینڈ‘ کی لائف لائن میں اس گینگ کے لوگوں کو فون کرتا اور وہ اسے سوالات کے جوابات بتاتے۔ اس کے علاوہ بھی وہ جوابات فروخت کرتے رہے۔ انتظامیہ کے مطابق 2002ءسے 2007ءکے درمیان شو نے اپنے مہمانوں کو 5کروڑ پاﺅنڈ کی رقم انعام میں دی۔ اس کا کم از کم 10فیصد اس گینگ کے ہاتھوں میں گیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -