افغانستان میں حملے، جھڑپ، 3اہلکار، 9جنگجو ہلاک، 30سے زائد فوجی لاپتہ

افغانستان میں حملے، جھڑپ، 3اہلکار، 9جنگجو ہلاک، 30سے زائد فوجی لاپتہ

  

 کابل (این این آئی)افغانستان سے امریکی اور نیٹو فوج کے انخلا کا باقاعدہ آغاز ہوگیا ہے۔امریکی صدر جوبائیڈن نے افغانستان میں موجود فوجیوں کے انخلاکیلئے یکم مئی کی تاریخ مقرر کی تھی۔اس وقت افغانستان میں امریکا کے ڈھائی سے ساڑھے تین ہزارفوجی اور نیٹو کے قریباً سات ہزار فوجی موجود ہیں۔میڈیارپورٹس کے مطابق امریکی فوج اس وقت اپنے سامان کی فہرستیں تیارکررہی ہے اور یہ فیصلہ کررہی ہے کہ کس سامان کو واپس امریکا بھیجا جاسکتا ہے،کون سا سامان افغان سکیورٹی فورسز کے حوالے کیا جائے گا اور کس فوجی سازو سامان کوافغانستان کی مارکیٹوں میں عام بیچا جاسکتا ہے۔حالیہ ہفتوں کے دوران میں امریکی فوج اپنا بہت سا سازوسامان سی17مال بردارطیاروں کے ذریعے واپس بھیج چکی ہے اورابھی بھیج رہی ہے۔بران یونیورسٹی کے جنگ کی لاگت منصوبہ کے مطابق امریکا افغانستان میں گذشتہ دو عشروں کے دوران میں 20 کھرب ڈالر جھونک چکا ہے۔امریکی محکمہ دفاع کے حکام اور سفارت کاروں کا کہنا تھا کہ گذشتہ سال کے دوران میں امریکی فوج نے جن چھوٹے فوجی اڈوں کو خالی کیا ہے،انھیں بند کردیا گیا ہے۔تاہم ان کا کہنا ہے کہ صدر بائیڈن کے اعلان کے بعد سے صرف 60 فوجی واپس گئے ہیں۔

 امریکی فوج

 کابل(این این آئی) افغانستان کے دارالحکومت میں آئل ٹینکرز میں لگنے والی آگ نے تباہی مچادی جس کے نتیجے میں 12 افراد ہلاک اور 8 شدید زخمی ہوگئے۔فائر بریگیڈ کے عملے نے چار گھنٹوں کی جدوجہد کے بعد آگ پر قابو پالیا۔ ہلاک اور زخمی ہونے والوں کو قریبی ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے جہاں 2 کی حالت نازک بتائی جارہی ہے۔دوسری جانب قلات میں پولیس چیک پوسٹ پر طالبان حملے میں 3 پولیس اہلکار ہلاک اور 2 زخمی ہوگئے۔ پولیس نے جوابی کارروائی میں 9 طالبان جنگجوؤں کو مارنے کا دعوی کیا ہے تاہم طالبان نے دعوے کی تردید کی ہے۔دریں اثنا غزنی میں بھی طالبان جنگجووں نے فوجی چیک پوسٹ پر حملہ کردیا۔ سکیورٹی فورسز اور طالبان جنگجووں کے درمیان جھڑپ 2 گھنٹے تک جاری رہی۔ حکام نے بتایا ہے کہ 30 سے زائد فوجی اہلکار لاپتہ ہوگئے۔افغان میڈیا کے مطابق کابل کے علاقے قلعہ مراد کی مرکزی شاہراہ پر فیول ٹینکرز کے آپس میں تصادم سے خوفناک آگ بھڑک اٹھی۔ دیکھتے ہی دیکھتے آگ نے دیگر آئل ٹینکرز اور گاڑیوں کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا۔آتشزدگی میں 12 فیول ٹینکرز، 4 کاریں اور 3 ٹرک جل کر خاکستر ہوگئے جب کہ آپس کی دکانوں اور گھروں کو بھی شدید نقصان پہنچا ہے۔ حادثے میں مجموعی طور پر 12 افراد ہلاک اور 8 زخمی ہوگئے۔فائر بریگیڈ کے عملے نے چار گھنٹوں کی جدوجہد کے بعد آگ پر قابو پالیا۔ ہلاک اور زخمی ہونے والوں کو قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جہاں 2 کی حالت نازک بتائی جارہی ہے۔

طالبان حملے

مزید :

صفحہ آخر -