لازمی مضامین سے اسلامی مواد کے اخراج پر احتجاج تحریک چلانے کا اعلان 

لازمی مضامین سے اسلامی مواد کے اخراج پر احتجاج تحریک چلانے کا اعلان 

  

 پشاور (سٹی رپورٹر)تنظیم اساتذہ خیبر پختونخوا نے مبینہ طور پر لازمی مضامین سے اسلامی مواد کے اخراج پر احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ اگر  لازمی مضامین سے اسلامی مواد کے اخراج کا فیصلہ واپس نہ لیا گیا تو عید کے بعد سڑکوں پر نکل کر احتجاج کریں گے اور مطالبات تسلیم نہ ہونے تک احتجاج جاری رکھیں گے تنظیم اساتذہ صوبہ خیبر پختون خواہ کے صدر ہدایت اللہ اور جنرل سیکرٹری ڈاکٹر محمد ناصر نے کہا ہے کہ تعلیمی نصاب میں لازمی مضامین سے اسلامی مواد کے اخراج کے لئے سپریم کورٹ میں داخل کئے گئے رٹ کی مخالفت کرتے ہیں صوبائی صدر ہدایت اللہ نے کہاکہ یہ ایک مسلم اکثریتی ملک ہے اور اس کیمعرض وجود میں لانے کا مقصد بھی یہ تھا کہ یہاں پر ہم اسلامی تعلیمات کے مطابق زندگی گزاریں گے انہوں نے کہا کہ کہ اسلامی مواد سے اقلیتوں کو کوئی تکلیف بھی نہیں پہنچ رہی اس لئے نصاب تعلیم سے اسلامی مواد کا نکالنا اسلام کی اور آئین کی  خلاف ورزی ہے انہوں نے مزیدکہا کہ تنظیم اساتذہ اس صورتحال پر انتہائی رنج وغم کا اظہار کرتی ہے کہ کیوں مسلم اکثریتی ملک میں مسلمانوں کے مذہب کے خلاف اس طرح کے اقدامات ہورہے ہیں اور مسلمانوں سے ان کے اپنے ہی اسلامی دیس میں انکا حق چھیننے کی کوشش کی جارہی ہے انہوں نیاس عزم کا اظہار کیا کہ ہم لازمی مضامین سے اسلامی مواد کا اخراج ہر گز نہیں ہونے دیں گے اور اگر انکے مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو عید کے بعد اڑکوں پر نکل احتجاج کریں گے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -