آزاد میڈیا کے بغیر مضبوط جمہوریت کا تصور ناممکن ہے: مبشر میر منظر نقوی

آزاد میڈیا کے بغیر مضبوط جمہوریت کا تصور ناممکن ہے: مبشر میر منظر نقوی

  

 کراچی (اسٹاف رپورٹر)کراچی ایڈیٹرز کلب کے صدر مبشر میر اور جنرل سیکرٹری منظر نقوی نے کہا ہے کہ  آزادی صحافت کے لئے صحا فیوں کی جدوجہد اور قربانیاں لائق تحسین ہیں۔ آزاد میڈیا کے بغیر مضبوط جمہوریت کا تصور ناممکن ہے، معاشرے کی اصلاح اور عوام کو اجتماعی شعور دینے میں میڈیا اور صحافیوں کا کردار مسلمہ ہے۔عالمی یوم آزادی صحافت پر اپنے پیغام میں مبشر میر اور منظر نقوی نے کہا کہ آج کا دن ہمیں ان صحافیوں کی یاد دلاتا ہے جنہوں نے صحافت کی آزادی کے لئے اپنی جانوں کی قربانیاں دی ہیں۔  کورونا کی موجودہ صورتحال میں صحافیوں کے کردار  اور ان کے زمہ درانہ رویے کی  تعریف کرتے ہوئے انہوں کہا کہ اس مشکل صورتحال میں صحافی  لوگوں کو بروقت خبریں پہنچانے کے لئے اپنی جانوں کی پرواہ کئے بغیر فرنٹ لائن پر اپنی زمہ داریاں نبھا رہے ہیں۔  اس موقع پر کورونا سے متاثرہ تمام صحافیوں کی جلد صحت یابی کے لئے نیک تمناؤں کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نیحکومت سے مطالبہ کیا کہ صحافیوں کی کورونا ویکسی نیشن کے لیے خصوصی اقدامات کیے جائیں۔انہوں نے کہا کہ جرنلسٹس پروٹیکشن بل ایک طویل عرصے سے التواء کا شکار ہے۔حکومت جلد از جلد اس بل کو پارلیمنٹ میں پیش کرے۔انہوں نے کہا کہ جس طرح صحافیوں کاتحفظ اور میڈیا کی آزادی ضروری ہے اسی طرح  صحافیوں کی سوشل سکیورٹی بھی اہم ہے۔2017 کے بعد سے پرنٹ اورالیکٹرونک میڈیا معاشی بحران کا شکار ہے۔ میڈیا کے واجبات ادا نہیں کیے جارہے ہیں۔بڑی تعداد میں میڈیا ورکرز بیروزگاری کا شکار ہوئے ہیں۔ کورونا کا اب تیسرا فیز شروع ہوچکا ہے لیکن حکومت کی جانب سے اب تک میڈیا انڈسٹری کے لیے کسی پیکج کا اعلان نہ کیا جانا افسوسناک ہے۔حکومت میڈیا انڈسٹری کے لیے فوری ریلیف پیکج کا اعلان کرے۔ انہوں نے کہا کہ آج صحافت کا عالمی دن منانے کا مقصد اور حقیقی تقاضا ہے کہ صحافتی برادری کو صحافی ذمہ داریاں ادا کرنے میں آزادی حاصل ہو، انکے جائز حقوق کا تحفظ ہو۔ آج پرنٹ میڈیا اور الیکٹرونک میڈیا کا کردار ناقابل فراموش ہے اسکی اہمیت کو کبھی بھی کسی بھی صورت فراموش یا کم نہیں کیا جا سکتا۔مشکل حالات میں صحافیوں کا کرادر قابل تحسین ہے جو اپنی جانوں کی پروا کئے بغیر سچ کو عوام کے سامنے لانے کیلئے میدان عمل میں موجود ہیں۔مبشر میر اور منظر نقوی نے کہا کہ 3 مئی کراچی ایڈیٹرز کلب کا یوم تاسیس بھی ہے۔چار سال کے دوران کے ای سی ملک کے اہم تھنک ٹینک کے طور پر سامنے آیا ہے۔ صدر مملکت عارف علوی سمیت سیاسی شخصیات اور غیر ملکی سفارت کاروں نے بھی کراچی ایڈیٹرز کلب کی خدمات کااعتراف کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم اس موقع پر صدرعارف علوی کا شکریہ ادا کرتے ہیں کہ جنہوں نے کراچی ایڈیٹرز کلب کی اس تجویز سے اتفاق کیا کہ سینئرمیڈیا پرسنز کو یونیورسٹیز میں وزٹنگ فیکلٹی میں رکھا جائے۔ امید ہے کہ اس تجویز پر عملردرآمد کیا جائے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -