پاکستان جیمز اینڈ جیولری ڈویلپمنٹ کمپنی اور سی پیک اتھارٹی جیمز اینڈ جیولری سیکٹر کی ترقی کے لیے شراکت داری پر متفق ہوگئے

پاکستان جیمز اینڈ جیولری ڈویلپمنٹ کمپنی اور سی پیک اتھارٹی جیمز اینڈ جیولری ...
پاکستان جیمز اینڈ جیولری ڈویلپمنٹ کمپنی اور سی پیک اتھارٹی جیمز اینڈ جیولری سیکٹر کی ترقی کے لیے شراکت داری پر متفق ہوگئے

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان جیمز اینڈ جیولری ڈویلپمنٹ کمپنی(پی جی جے ڈی سی) اور سی پیک اتھارٹی کے مابین جیمز اینڈ جیولری سیکٹر کی ترقی کے لیے شراکت داری پر اتفاق ہو گیا۔ ویب سائٹ گوادر پروڈاٹ پی کے (gwadarpro.pk) میں شائع ہونے والے آرٹیکل میں فاطمہ جاوید لکھتی ہیں کہ اس حوالے سے پی جی جے ڈی سی کے چیئرمین شاہد اقبال قریشی اور چیئرمین سی پیک اتھارٹی لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ کے درمیان ملاقات ہوئی، جس میں کمپنی کے آپریشنز کے گنجائش اور دیگر معاملات پر گفتگو کی گئی۔

اس موقع پر چیئرمین سی پیک اتھارٹی کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت جیمز اینڈ جیولری سیکٹر کی ترقی پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہے لہٰذا پی جی جے ڈی سی کے آپریشن کو مضبوط کرنا بہت اہم ہے۔ انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں دونوں آرگنائزیشنز کے باہمی اشتراک کے مواقع تلاش کرنے ہوں گے تاکہ اس سیکٹر کو اوپر اٹھایا جا سکے۔ ملاقات میں چیئرمین پی جی جے ڈی سی کا کہنا تھا کہ ”پاکستان کے پہاڑی علاقوں میں فیروزہ، روبی، نیلم، زمرد اور دیگر قیمتی پتھر وافر پائے جاتے ہیں۔ بلوچستان ان قیمتی معدنیات سے مالامال ہے۔ ایسے کئی شعبے ہیں جن میں سی پیک اتھارٹی اور پی جی جے ڈی سی مل کر کام کر سکتی ہیں اور پاک چین اقتصادی راہداری کو کماحقہ بروئے کار لاتے ہوئے جیمز اینڈ جیولری سیکٹر کے لیے براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری لا سکتی ہیں۔“

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -