مقبوضہ کشمیر، عید کے روز تین کشمیری نوجوان گرفتار 

مقبوضہ کشمیر، عید کے روز تین کشمیری نوجوان گرفتار 

  

سرینگر(این این آئی) غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر میں بھارتی پولیس نے رمضان کے مقدس مہینے کے اختتام پر منائے جانیوالے مسلمانوں کے تہوار عیدالفطر کے موقع پر سرینگر اور کولگام اضلاع سے تین نوجوانوں کو گرفتار کرلیا۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا ایک نوجوان کو جس کی شناخت گڈیہامہ کولگام کے یامین یوسف بٹ کے نام سے ہوئی ہے، کولگام پولیس اور بھارتی فوج نے گرفتار کر لیا۔پولیس نے سرینگر شہر کے مضافات میں نوگام علاقے سے ایک اور نوجوان کو گرفتار کیاہے۔پولیس ترجمان نے بتایا کہ نوجوان کی شناخت مانچھوا بڈگام کے شاہد گلزار کے نام سے ہوئی ہے جسے بھارتی فوج اورپولیس نے گرفتار کیا ہے۔اس سے قبل پولیس نے جنوبی کشمیر کے ضلع کولگام سے ایک تیسرے نوجوان کو گرفتار کیا۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ تینوں نوجوانوں کو”ہائبرڈ عسکریت پسند“ قرار دینے کے بعد گرفتار کیا گیاہے۔دوسری جانب غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر میں سرینگر کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر سکریننگ کے دوران ایک بھارتی فوجی کے سامان سے ایک دستی بم برآمد ہوا۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق حکام نے بتایا کہ ایئر لائنز کے اسکرینر نے گیٹ پر سامان کی اسکریننگ کے دوران راشٹریہ رائفلز سے وابستہ ایک فوجی کے سامان سے ایک دستی بم برآمد کیا۔ فوجی اہلکار کی شناخت بالاجی سمپت کے نام سے ہوئی ہے اور اس نے دستی بم اپنے سامان میں چھپایاتھا۔سمپت سرینگر سے انڈیگو کی فلائٹ 6E-5031/2061کے ذریعے دہلی کے راستے اپنے آبائی شہر چنئی جا رہا تھا۔سرینگر ایئرپورٹ کے ایک افسر نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ فوجی اہلکار کو مزید پوچھ گچھ کے لیے پولیس کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

مقبوضہ کشمیر

مزید :

صفحہ آخر -