قائد اعظم محمد علی جناح کا آزاد پاکستان کی پہلی عید پر پیغام یاد کیجئے

قائد اعظم محمد علی جناح کا آزاد پاکستان کی پہلی عید پر پیغام یاد کیجئے
قائد اعظم محمد علی جناح کا آزاد پاکستان کی پہلی عید پر پیغام یاد کیجئے

  

معصومہ مبشر

عید کے روز ہم اپنے بزرگوں کو یاد کرتے ان سے دعائیں لیتے اور اپنے آباؤاجداد  کو جو اس دنیا میں نہیں رہے انہیں یاد کرتے اور ان کی قبروں پر جاتے ہیں  ان کی حیات و تعلیمات کو یاد کرتے ہیں ۔۔۔بالکل اسی طرح ہمیں اپنے عظیم  محسن ، عظیم قائد   جن کی قیادت میں ہمیں پیارا دیس پاکستان اور  اس دنیا میں سب سے قیمتی  دولت آزادی کی صورت میں ملی ، انہیں بھی یاد کرنا چاہئے اوران کی تعلیمات کو بھی دہرانا چاہئے ۔  قائدِ اعظم محمّد علی جناح نے 18اگست 1947ء کو آزاد پاکستان کی پہلی عید کے موقعے پر قوم کے نام پیغام میں کہا تھا کہ" یہ آزاد پاکستان کی پہلی عید ہے، جو آزادی کے فوراً بعد آئی ہے۔ یہی اِس تہوار کی خصوصیت ہے کہ ہم آزاد پاکستان میں پہلی عید منا رہے ہیں۔ میں تمام مسلمانوں کو اِس موقعے پر مبارک باد دینا چاہتا ہوں۔ اُمید ہے اب خوش حالی کے ایک نئے دَور کا آغاز ہوگا، یہ اسلامی اقدار کے احیاء کی طرف ایک قدم ہوگا۔ میری دُعا ہے کہ اللّہ تعالیٰ ہمیں اقوامِ عالم میں ایک عظیم اسلامی مُلک بننے کی طاقت عطا کرے۔ اِس میں شک نہیں کہ ہم نے پاکستان حاصل کرلیا ہے لیکن ابھی تو آغاز ہے، ایک نصب العین کی طرف بڑھنے کا۔ ہم پر عظیم ذمّے داریاں عائد ہوتی ہیں اور اِس حساب سے ہمارے عزائم بھی عظیم اور مستحکم ہونے چاہئیں۔  اب ٹھوس کام کرنے کا وقت آگیا ہے۔ مجھے کوئی شبہ نہیں کہ مسلمان متحد ہو کر تمام رکاوٹوں پر قابو پا لیں گے۔ اِس موقعے پر ہمیں اُن بھائیوں کو نہیں بھولنا چاہیے کہ جنہوں نے قربانیاں دی ہیں تاکہ ہم آزاد زندگیاں بسر کرسکیں۔ ہم دُعا کرتے ہیں کہ اُن کی روح کو سکون نصیب ہو جو لوگ بھارت رہ گئے ہیں، اُنہیں یقین دلاتا ہوں کہ ہم اُنہیں کبھی تنہا نہیں چھوڑیں گے، ہمارے دل اُن کے ساتھ ہیں۔ ہم اِس بات کو یقینی بنائیں گے کہ اُن کی زندگیاں محفوظ رہیں۔"

نوٹ : ادارے کا مضمون نگار کی آرا سے متفق ہونا ضروری نہیں  

مزید :

بلاگ -