بھارت میں 18سالہ مسلمان نرس اجتماعی زیادتی کے بعد قتل

بھارت میں 18سالہ مسلمان نرس اجتماعی زیادتی کے بعد قتل
بھارت میں 18سالہ مسلمان نرس اجتماعی زیادتی کے بعد قتل

  

نئی دہلی  (ویب ڈیسک) بھارتی ریاست اترپردیش کے شہر بنگرماؤ میں نجی نرسنگ ہوم میں کام کرنے والی 18 سالہ مسلمان لڑکی کو اجتماعی زیادتی کےبعد قتل کردیا گیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق مسلمان لڑکی اپنے گاؤں کے قریب ایک نجی ہسپتال میں نرس کے طور پر کام کرتی تھی۔ لڑکی کے خاندان نے الزام عائد کیا کہ جمعہ کے روز وہ گھر سے ہسپتال گئی تھی جہاں پر نرسنگ ہوم کے آپریٹر نے اپنے دیگر ساتھیوں کے ساتھ مل کر اس کا گینگ ریپ کیا اور پھر اسے قتل کردیا۔

لڑکی کی والدہ نے کہا کہ اتوار کے روز ان کو اطلاع ملی کے ان کی بیٹی نے خود کو پھانسی لگا کر خودکشی کر لی ہے، تاہم  ہمیں یقین ہے کہ نرسنگ ہوم کے آپریٹر نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ مل کر اس کا گینگ ریپ کرنے کے بعد اسے قتل کیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -