کینگروز رنز کے پہاڑ تلے دب گئے

کینگروز رنز کے پہاڑ تلے دب گئے

  

                               ابوظہبی (سپورٹس ڈےسک)پاکستانی بلے بازوں کی شاندار کارکردگی کے بعد باﺅلرز کی نپی تلی باﺅلنگ کی بدولت گرین شرٹس کی کینگروز کے خلاف آخری ٹیسٹ میں گرفت مضبوط ہو گئی، کینگروز نے چوتھے روز کھیل ختم ہونے تک اپنی دوسری اننگز میں 4 وکٹوں پر 143 رنز بنا لئے تھے، آسٹریلیا کو میچ میں کامیابی کیلئے مزید 460 رنز اور پاکستان کو 6 وکٹوں کی ضرورت ہے۔ سٹیون سمتھ 38 اور مچل مارش 26 رنز بنا کر وکٹ پر موجود ہیں۔ ذوالفقار بابر نے 3 وکٹیں حاصل کیں۔ قبل ازیں پاکستان نے 293 رنز 3 کھلاڑی آﺅٹ پر اپنی دوسری اننگز ڈیکلیئرکر کے کینگروز کو مجموعی طور پر فتح کیلئے 603 رنز کا ہدف دیا۔ کپتان مصباح الحق نے ریکارڈ ساز اننگز اور اظہر علی نے ناقابل شکست سنچری بنا کر ٹیم کی پوزیشن کو مستحکم کیا، دونوں بلے بازوں نے کینگروز کے خلاف مسلسل دوسری اننگز میں سنچریاں بنائیں۔ اس میچ کی خاص بات یہ ہے کہ مصباح الحق نے کئی ریکارڈز اپنے نام کئے، انہوں نے ٹیسٹ تاریخ کی تیز ترین نصف سنچری کا عالمی ریکارڈ اپنے نام کیا، اس کے علاوہ انہوں نے تیز ترین سنچری کا ورلڈ ریکارڈ بھی برابر کیا، اس کے ساتھ ساتھ مصباح نے کم ترین وقت میں سنچری کا عالمی ریکارڈ بھی اپنے قبضے میں کیا۔ اتوار کو ابو ظہبی ٹیسٹ کے چوتھے روز پاکستانی ٹیم نے 61 رنز 2 کھلاڑی آﺅٹ پر اپنی دوسری ادھوری اننگز دوبارہ شروع کی تو اظہر علی 21 اور یونس خان 16 رنز پر کھیل رہے تھے، دونوں بلے بازوں نے محتاط انداز سے دن کا آغاز کیا اور ٹیم کا سکور 152 تک پہنچا دیا، یہاں پر سٹیون سمتھ نے یونس خان کو آﺅٹ کر کے ٹیم کو اہم کامیابی دلائی، خان 46 رنز بنا کرآﺅٹ ہوئے۔ اس موقع پر کپتان مصباح الحق نے اظہر علی کا ساتھ دیا،دونوں بلے بازوں کے سامنے کینگروز باﺅلرز بالکل بے بس نظر آئے، مصباح نے آتے ہی ٹیسٹ میچ کو ٹی ٹونٹی میں بدل دیا اور دھواں دار بیٹنگ کرتے ہوئے 4 چھکوں کی مدد سے 21 گیندوں پر نصف سنچری بنا کر ٹیسٹ تاریخ کی تیز ترین ففٹی بنانے کا عالمی ریکارڈ اپنے نام کیا، اس کے بعد بھی مصباح نے عمدہ کارکردگی کے تسلسل کو برقرار رکھا اور 56 گیندوں پر سنچری بنا کر ویسٹ انڈیز کے ویون رچرڈز کی تیز ترین سنچری کا ورلڈ ریکارڈ برابر کیا، یہ مصباح کی کینگروز کے خلاف مسلسل دوسری اننگز میں سنچری تھی، اس کے بعد اظہر علی نے بھی کینگروز کے خلاف مسلسل دوسری سنچری مکمل کی اور مصباح نے 293 رنز 3 کھلاڑی آﺅٹ پر اننگز ڈیکلیئر کر کے کینگروز کو فتح کیلئے 603 رنز کا ہدف دیا۔ مصباح الحق 101 اور اظہر علی 100 رنز بنا کر ناقابل شکست رہے۔ مچل جانسن نے 2 اور سٹیون سمتھ نے ایک وکٹ حاصل کی۔ بڑے ہدف کے خوف سے ہی کینگروز کی بیٹنگ لائن اپ لڑکھڑا گئی، ذوالفقار بابر نے نپی تلی باﺅلنگ کرتے ہوئے 43 رنز پر آسٹریلیا کے تین اہم کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی، کرس راجرز 2، گلین میکسویل 4 اور کپتان مائیکل کلارک 5 رنز بنا کر آﺅٹ ہوئے، 101 کے مجموعی سکور پر حفیظ نے وارنر کو آﺅٹ کر کے ٹیم کو بڑی کامیابی دلائی، وارنر 58 رنز بنا کر آﺅٹ ہوئے، اس کے بعد سٹیون سمتھ اور مچل مارش نے محتاط انداز اپنایا اور مزید کوئی نقصان نہ ہونے دیا، چوتھے روز جب کھیل ختم ہوا آسٹریلیا نے 4 وکٹوں پر 143 رنز بنا لئے تھے، کینگروز کو فتح کیلئے 460 رنز اور پاکستان کو 6 وکٹیں درکار ہیں۔ ذوالفقار بابر نے 3 اور حفیظ نے ایک وکٹ حاصل کی۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -