بزدلانہ کاروائیاں پاکستانی قوم اور بہادرافواج ، رینجرز کے حوصلے پست نہیں کر سکتیں :شہباز شریف

بزدلانہ کاروائیاں پاکستانی قوم اور بہادرافواج ، رینجرز کے حوصلے پست نہیں کر ...

  

                لاہو(سٹاف رپورٹر)ر وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے واہگہ بارڈر کے قریب ہونے والے دھماکے میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے اور اس اندوہناک واقعہ کی پرزور مذمت کرتے ہوئے جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین سے اظہارتعزیت اور زخمیوں سے دلی ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے واقعہ کی اطلاع ملنے کے بعد دو صوبائی وزراءمیاں مجتبیٰ شجاع الرحمن اور بلال یٰسین کو گھرکی اور شالیمار ہسپتال روانہ کرتے ہوئے ہدایت کی کہ وہ ذاتی طور پر زخمیوں کو بہترین طبی سہولتوں کی فراہمی اور ان کی دیکھ بھال کے لئے وہیں موجود رہیں اورانہیں طبی امداد کو یقینی بنائیں۔ وزیراعلیٰ نے محکمہ صحت کے حکام کو بھی ہدایت کی ہے کہ سرکاری ہسپتالوں میں بھی زخمیوں کو علاج معالجے کی ہر ممکن سہولت فراہم کی جائے ۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے سانحہ واہگہ میں جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین اور زخمیوں کے لئے مالی امداد کا بھی اعلان کیا ہے۔ جس کے تحت شہداءکے ورثاءکو 5لاکھ روپے فی کس مالی امداد فراہم کی جائے گی جبکہ شدید زخمی ہونے والے افراد کو 75ہزار روپے اور معمولی زخمیوں کو 25ہزار روپے مالی امداد دی جائے گی۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے کہاہے کہ ایسی بزدلانہ کارروائیاں پاکستانی قوم اور ہماری بہادر افواج اور رینجرز کے حوصلے پست نہیں کر سکتیں۔ ہم سب کے حوصلے بہت بلند ہیں اور انشاءاللہ ساری قوم کی حمایت سے مطلوبہ نتائج حاصل ہونے تک دہشت گردوں کے خلاف آپریشن جاری رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ ضرب عضب میں ہماری بہادر افواج مردانہ وار جنگ لڑ رہی ہیں اور انشاءاللہ ہم ملک دشمن عناصر کے عزائم کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ محمد شہبازشریف نے کہا کہ افواج پاکستان نے ملک و قوم کی حفاظت کا قومی فریضہ انتہائی بہادرانہ انداز میں ادا کیا ہے اور ساری قوم دہشت گردوں کے خلاف فوج کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔انہوں نے کہا کہ بم دھماکوں میں معصوم شہریوں کی زندگیوں سے کھیلنے والے اپنے انجام سے نہیں بچ سکیں گے اور انہیں ہر صورت کیفرکردار تک پہنچایا جائے گا۔

 لاہور(وقائع نگار خصوصی)وزیر اعلیٰ محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ موجودہ حالات میں غیر معمولی اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔ سکیورٹی ادارے مرتب کردہ سکیورٹی پلان پر ہر قیمت پر عملدر آمد یقینی بنائیں۔مجالس اورجلوسوں کی سکیورٹی پر خصوصی توجہ دی جائے اور ان کے گرد چار درجاتی حصارقائم کیا جائے ۔سینئر افسران سکیورٹی انتظامات کی نگرانی کیلئے خود فیلڈ میں موجود رہیں۔اشتعال انگیز تقاریر اور نفرت پر مبنی مواد تقسیم کرنے والوں کے خلاف بلا امتیاز فوری کارروائی کی جائے۔شر پسند عناصر پر کڑی نظر رکھی جائے اورقانون نافذ کرنے والے ادارے آپس میں قریبی رابطہ رکھیں۔وہ یہاں یوم عاشور پر سکیورٹی انتظامات کا جائزہ لینے کے حوالے سے اعلی سطح کے اجلاس کی صدارت کررہے تھے ۔انہوں نے ویڈیو لنک کے ذریعے راولپنڈی اورملتان ڈویژن کے اجلاسوں سے بھی خطاب کیا ،وہاںیوم عاشور کے حوالے سے کیے گئے سکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا اورضروری ہدایات جاری کیں۔وزیراعلیٰ محمدشہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کٹھن دور سے گزررہا ہے ۔دہشت گردی اورانتہاء پسندی نے وطن عزیزکی بنیادوں کو ہلا کر رکھ دیا ہے ۔ملک دشمن عناصر ملکی سا لمیت کو نقصان پہنچانے کے درپے ہیں ۔دشمن پاکستان کو پھلتا پھولتا نہیں دیکھنا چاہتے۔پوری قوم کو متحد ہوکر ملک دشمن عناصر کے مذموم عزائم اور ارادوں کو ناکام بنانا ہے ۔ سکیورٹی اداروں کو پوری طرح چوکس رہتے ہوئے اپنے فرائض محنت اورجانفشانی سے سرانجام دینا ہوں گے۔انہوں نے کہاکہ انشاء اللہ امن کے دشمنوں کے عزائم ناکام ہوں گے اوراللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے عاشورہ محرم الحرام خیر وعافیت سے گزرے گا۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ لاؤڈسپیکر کے استعمال اور اسلحہ کی نمائش کی پابندی پر سختی سے عملدر آمدکرایا جائے اور ذمہ داروں کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے۔کابینہ کمیٹی صوبہ بھر میں سکیورٹی انتظامات پر کڑی نظر رکھے۔انہوں نے کہاکہ علماء کرام معاشرے میں بھائی چارے اور مذہبی ہم آہنگی کے قیام کے لئے اپنا بھر پور کردارادا کریں۔صوبائی وزیر داخلہ کرنل (ر) شجاع خانزادہ نے بتایا کہ اس مرتبہ گذشتہ سال سے بڑھ کر سکیورٹی انتظامات کیے گئے ہیں ۔کابینہ کمیٹی کے اجلاس باقاعدگی سے ہورہے ہیں ۔کنٹرول روم 24گھنٹے کام کررہا ہے ۔ضلعی امن کمیٹیوں کو بھی پوری طرح متحرک اور با اختیار بنایاگیا ہے ۔انسپکٹرجنرل پولیس اورسیکرٹری داخلہ نے عاشورہ محرم الحرام کے حوالے سے کیے گئے سکیورٹی انتظامات کے بار ے میں تفصیلی بریفنگ دی۔انسپکٹر جنرل پولیس نے بتایا کہ تمام اضلاع میں امن وامان کے قیام کیلئے اس مرتبہ اضافی وسائل فراہم کیے گئے ہیں ۔مانیٹرنگ کا بھی موثر نظام وضع کیا گیا ہے ۔صوبائی وزراء کرنل (ر) شجاع خانزادہ ،بلال یاسین،راجہ اشفاق سرور،ایم پی اے رانا ثناء اللہ خان،منتخب نمائندوں ،چیف سیکرٹری پنجاب ،سیکرٹری داخلہ ، قانون نافذ کرنے والے اداروں اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔راولپنڈی اور ملتان ڈویژن میں منعقدہ اجلاسوں میں متعلقہ کمشنرز اورآر پی اوز نے سکیورٹی انتظامات کے حوالے سے آگاہ کیا۔ان اجلاسوں میں صوبائی وزراء، اراکین اسمبلی،انتظامی و پولیس افسران نے بھی شرکت کی۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے ثمرات ہر صورت عام آدمی تک پہنچنے چاہئیں۔پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا حقیقی فائدہ عوام تک منتقل کرنا متعلقہ اداروں کی ذمہ داری ہے۔ قیمتوں میں کمی کا فائدہ عام آدمی تک نہ پہنچاتو یہ زیادتی ہوں گی جسے کسی صورت برداشت نہیں کروں گا۔متعلقہ ادارے تندہی اورجانفشانی سے کام کریں اور پٹرولیم مصنوعات کی کمی کے حقیقی ثمرات کی عوام تک منتقلی یقینی بنائیں۔وہ یہاں پرائس کنٹرول کے حوالے سے اعلی سطح کے اجلاس کی صدارت کررہے تھے ۔جس میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے تناظر میں اشیائے ضروریہ اور ٹرانسپورٹ کرایوں میں کمی کیلئے کیے گئے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔متعلقہ سیکرٹریوں نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے پیش نظر اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عوام کو سہولتیں اور ریلیف کی فراہمی کے لئے ہر ضروری قدم اٹھایاجائے ۔عوام کو ناجائز منافع خوروں کے رحم و کرم پر کسی صورت نہیں چھوڑا جاسکتا۔پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے بعد ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں کمی کے حوالے سے فےئر فارمولہ بنایا جائے ۔انہوں نے کہاکہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے تناسب سے روزمرہ استعمال کی اشیائے ضروریہ ،پھلوں ، سبزیوں اور ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں کمی لانے کے لئے تمام ضروری اقدامات کیے جائیں۔اس مقصد کیلئے ماہرین کی مشاورت سے حقیقت پسندانہ فارمولہ فوری طورپروضع کیا جائے ۔وضع کردہ فارمولہ اورایکشن پلان پر پوری طرح عملدر آمد یقینی بنایاجائے۔انہوں نے کہا کہ ایکشن پلان پر عملد رآمد کی مانیٹرنگ کی جائے اورمانیٹرنگ کا موثر نظام وضع کیا جائے ۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ پٹرول پمپوں پر مقررہ نرخوں پر پٹرولیم مصنوعات کی فراہمی یقینی بنائی جائے ۔کسی بھی پٹرول پمپ پر پٹرول یاڈیزل کی عدم دستیابی کی شکایت پیدا نہیں ہونی چاہیے۔صوبائی وزراء چوہدری محمد شفیق،بلال یاسین،راجہ اشفاق سرور،ڈاکٹرفرخ جاوید،مشیر خواجہ احمد حسان،سپیشل اسسٹنٹ ارشد جٹ،اراکین صوبائی اسمبلی،چیف سیکرٹری،ایڈیشنل چیف سیکرٹری،انسپکٹرجنرل پولیس،سیکرٹریزاور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

مزید :

صفحہ اول -