مراد علی شاہ کو سندھ کا نیا وزیر اعلیٰ بنانے کیخلاف پارٹی کے اندر شدید ردعمل

مراد علی شاہ کو سندھ کا نیا وزیر اعلیٰ بنانے کیخلاف پارٹی کے اندر شدید ردعمل

  

کراچی(آئی این پی)سابق صدر آصف علی زرداری کی وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کو عہدے سے ہٹا کر سابق وزیراعلیٰ سندھ سید عبداللہ شاہ کے فرزند سید مراد علی شاہ کو صوبے کا نیا وزیر اعلیٰ بنانے کیخلاف پارٹی کے اندر شدید ردعمل ‘پیپلزپارٹی سندھ اسمبلی کے ارکان میں یقینی بغاوت نظر آنے لگی‘ مراد علی شاہ کو وزیر اعلیٰ کا امیدوار نامزد کرتے ہی3خواتین سمیت 22ارکان اسمبلی پر مشتمل فاروڈ بلاک سامنے آجائیگا۔ اتوار کو پیپلزپارٹی کے ایک رکن سندھ اسمبلی نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر ”آئی این پی“ کو اس حوالے سے اندرون خانہ جاری سرگرمیوں کی تفصیلات بارے بتایا کہ آئندہ صورتحال کا جائزہ لینے کےلئے ممکنہ فاروڈ بلاک میں شامل ہونے والے ارکان ایک دوسرے سے مکمل رابطے میں ہیں اور روزانہ کی بنیادر پر ہونے والے فیصلوں کو مانیٹر کرتے ہیں، ذرائع کے مطابق فاروڈ بلاک میں صوبائی کابینہ کے2 ارکان بھی پیش پیش ہوں گے،اس بارے میں رکن اسمبلی نے دونون وزراءکی جانب سے بھیجے گئے ایس ایم ایس بھی پڑھائے ذرائع کے مطابق فاروڈ بلاک بنانے والے اراکین کو اسمبلی کی ایک اہم شخصیت کی درپردہ حمایت حاصل ہے جو ضرورت پڑنے پرکھل کر سامنے آسکتی ہے،ذرائع نے مزید بتایا کہ سید مراد علی شاہ کو وزیر اعلیٰ نہ قبول کرنے والے ارکان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرادری اور شریک چیئرمین سابق صدر مملکت آصف علی زرداری سے بھی رابطہ کرنے کے لئے سوچ بچار کررہے ہیں،ذرائع کے مطابق بغاوت کرنے والوں کا موقف یہ ہے کہ اگر سید قائم علی شاہ کو تبدیل کرنا ہے،تو پارٹی کے سندھ اسمبلی میں موجود ارکان سے رائے لی جائے یک طرفہ فیصلہ مسلط نہ کیا جائے،ذرائع کے مطابق سنیئر ارکان اس بات کے حق میں بھی نہیں ہے عبدالغنی کے استعفیٰ سے خالی ہونے والے پی ایس73 کی نشست پر سید مراد علی شاہ کو رکن اسمبلی منتخب کرایا جائے،بلکہ وہ چاہتے ہیں کہ سید مراد علی شاہ کو مشیر خزانہ کے عہدے پر ہی رکھا جائے اور ان کا استعفی نا منظور کیا جائے بلکہ وزیراعلیٰ اس رکن اسمبلی کو بتایا جائے جو تجربہ کار ہونے کے ساتھ ارکان اسمبلی میں بھی اہمیت کا حامل ہو،زرائع کے مطابق سید مراد علی شاہ کی مخالفت کرنے والے ارکان اس بات کا انتظار کررہے تھے کہ جب سید مراد علی شاہ سے حمنی انتخابات کے لئے کاغذات نامزدگی جمع کرایا جائے گا،اس وقت وہ اپنے رابطوں میں تیزی لائیں گے اب وقت آچکا ہے اب جبکہ سید مراد علی شاہ نے اپنے کاغزات نامزدگی جمع کرادئیے ہیں، لہزاءخاموشی توڑی جائے،زرائع کے مطابق اختلافات کرنے والے ارکان حکومت مخالف جماعتوں سے بھی یوم عاشور کے بعد رابطہ کر کے اپنے فیصلے سے آگاہ کریں گے،اس کے علاوہ یہ ارکان آصف علی زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور کو بھی خدشات سے آگاہ کریں گے،زرائع نے دعویٰ کیا ان کے گروپ کوپارٹی کے بعض اراکین قومی اسمبلی اور2 سنیٹرز نے بھی ساتھ دینے کی یقین دہانی کرائی ہے،ان میں ایک رکن قومی اسمبلی تو پارٹی میں بھی اہم عہدے پر فائز ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -