سخت سیکورٹی انتظامات، صوبائی دارالحکومت کے مختلف مقامات پر آج ماتمی جلوس نکالے جائینگے

سخت سیکورٹی انتظامات، صوبائی دارالحکومت کے مختلف مقامات پر آج ماتمی جلوس ...

  

لاہور (سٹاف رپورٹر)ملک بھر میں محرم الحرام پر مجالس عزا اور ماتمی جلوسوں کا سلسلہ گزشتہ روز بھی جاری رہا۔ علمدار کربلا حضرت عباس ؓکی یاد میں مجالس ہوئیں۔گزشتہ روزصوبائی دارلحکومت میں شبینہ زوالجناح کا مرکزی جلوس موری گیٹ دربار حسین سے برآمد ہونے والا جلوس پرانی انار کلی میں آ کر اختتام پذیر ہوا۔گزشتہ روز اعزاداران کی بڑی تعداد نے سینہ کوبی کی۔مجلس کے بعد صبح دس بجے مرکزی جلوس برآمد ہوا جو اپنے مقررہ راستوں سے ہوتا ہوا پرانی انار کلی میں آ کر اختتام پذیر ہوا۔اسلام پورہ میںبھی مجالس کا انعقاد ہواجس میں علامہ اکبر کمیلی نے مسائب اہل بیت پر روشنی دالی۔اس کے علاوہ وسن پورہ ،ٹھوکر نیاز بیگ،مانگا منڈی ،گرین ٹاو¿ن ،شادمان ،شام کی بھٹیاں ،امامیہ کالونی ،شوکت خانم ،شاد باغ ،گلستان زہرا میں مجالس اور جلسوس برپا ہوئے۔جبکہ حضرت امام حسین ؓ کی یوم شہادت کے سلسلہ میںآج 9محرم الحرام کے موقع پر صوبائی دارلحکومت لاہور کے مختلف مقامات پر شبیہ و ذوالجناح کے جلوس نکالے جائیں گے۔ کرشن نگر پانڈو سٹریٹ سے زیارت آج9محرم کی صبح10بجے نکالی جائے گی جو کہ شام غروب آفتاب سے قبل پرانی انارکلی سے ہوتی ہوئی واپس پانڈو سٹریٹ پہنچ کر اختتام پذیر ہو گی۔ جبکہ امام بارگاہ قصر بتول شادمان سے بھی شبیہ و ذوالجناح کا جلوس نکالا جائے گا۔ لاہور میں اس سلسلہ میں ہونے والی تمام تقریبات غروب آفتاب سے قبل ختم کرنا ہوں گی ،حضرت امام حسینؓ کی یوم شہادت کے موقع پرلاہور میں سب سے بڑا ذوالجناح کا جلوس نثار حویلی اندرون موچی دروازہ چوک نواب صاحب سے 9محرم جمعرات کی رات 10بجے تقریبانمودار ہوگا اس سے قبل اہل تشیع کے معروف سکالر حضرت امام حسین ؓ کی سیرت اور واقعہ کربلا پر روشنی ڈالیں گے ۔ذوالجناح کا یہ جلوس اپنے مقررہ روٹ سے ہوتا ہوا نماز فجر سوہابازار رنگ محل میں ادا کرے گا اور 10محرم الحرام کوغروب آفتاب سے قبل شام 5بجے تک گامے شاہ میں داخل ہو جائے گا جہاں شام غریباں کی تقریب کا آغاز ہوگا۔ دریں اثنا ءکل 9محرم الحرم کو رات 10بجے آر اے بازارمیں شبیہ علم برآمد ہوگی ،صدر بازار لاہور کینٹ سے شبیہ و ذوالجناح کے جلوس برآمد ہوگا ۔جبکہ 10محرم الحرام کو آر اے بازار سے شبیہ ذوالجنا ح کا جلوس نوشاد کالونی اما م بارگاہ میں اختتام پذیر ہوگا۔جلوس کے دوران انتہائی سخت سیکیورٹی کے انتظامات کئے گئے ہیں،حساس مقامات پر فوج کے دستے تعینات کردیئے گئے ہیں۔ ذوالجناح کے جلوس میں شرکت کے لئے آنے والے تمام زائرین کی نہ صرف جامعہ تلاشی لی جارہی ہے بلکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے بچنے کے لئے ان کی مکمل مانیٹرنگ بھی کی جارہی ہے ۔

لاہور( کر ائم سیل) پنجاب حکومت نے یوم عاشور کے موقع پر جلوسوں کی مکمل مانیٹرنگ اور سیکورٹی کے حوالے سے تمام انتظامات مکمل کر لئے ہیں۔جلوس کے روٹس اور حساس مقامات پر 225 سی سی ٹی وی کیمرے نصب کر دئیے گئے ہیں،5 ہیلی کاپٹرز محرم کے جلوسو ںکی فضائی نگرانی کریں گے جبکہ وزیراعلی پنجاب کا اپنا ہیلی کاپٹر بھی اس فضائی نگرانی میں حصہ لے گا۔اس موقع پر پولےس افسران، ڈی سی او لاہور عثمان یونس،سی سی پی او، ڈی آئی جی پولیس اور دیگر اعلی افسران بھی موجود تھے۔ کرنل (ر)شجاع خانزادہ کا کہنا ہے کہ سی سی ٹی وی کیمروں کے مقامات پر بجلی کی معطلی کی صورت میں وہاں جنریٹرز اور دیگر متبادل انتظامات کئے گئے ہیں تاکہ سکیورٹی کاعمل کسی بھی طرح متاثر نہ ہو سکے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ یوم عاشور کے موقع پر جلوس کے گرد سکیورٹی کے 4 حصار قائم کئے جائیں گے اور ڈی سی او آفس میں قائم کنٹرول روم میں تمام لائن ایجنسیوں کے گریڈ18 اور 19 کے افسران ہمہ وقت موجود رہیں گے۔ لاہور سمیت صوبہ کے تمام اضلاع کے کنٹرول رومز کو صوبائی سطح کے مرکزی کنٹرول روم سے منسلک کر دیاگیا ہے۔ لاہور کے لئے 26 ہزار جبکہ صوبہ کے دیگر اضلاع کے لئے ایک لاکھ 20 ہزار پولیس حکام کی نفری تعینات کی گئی ہے۔ اور اس ضمن میں آئی ایس آئی ،آئی بی ،فوج،رینجرز اور دیگر ایجنسیاںباہم نزدیکی رابطہ رکھیں گی اور ملک کر کام کریں گی۔ محرم الحرام کے دوران امن وامان کو یقینی بنانے کے لئے فوج کی84 کمپنیاںجبکہ رینجرز کی 14 کمپنیاں حصہ لیں گی ۔ تمام اضلاع کی ضلعی انتظامیہ اور امن کمیٹیوں کو مکمل بااختیار بنا دیا گیا ہے۔ محرم الحرام کے دوران اسلحہ لے کر چلنے یا اس کی نمائش کرنے پر مکمل پابندی ہے اوراب تک خلاف ورزی کے مرتکب 100 افراد کے خلاف مقدمات درج کروائے جا چکے ہیں۔ جبکہ اس سلسلہ مےں اتحاد بین المسلمین نے اپنے مکمل تعاون کی یقین دہائی کروائی ہے۔ اور تمام ادارے ملکر کام کریں گے۔ صوبائی وزےر کی کربلا گامے شاہ میں شیعہ اکابرین خواجہ بشارت حسین کربلائی،رانا شاہ حسین قزلباش،سید عقیل حیدر گیلانی سے بھی ملاقات ہوئی جس پر شیعہ رہنماﺅں نے محرم الحرام کے حوالے سے پنجاب حکومت کی طرف سے کئے جانے والے سیکورٹی انتظامات پر اپنے مکمل اعتماد کا اظہارکیا اور انہیں اپنے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔

مزید :

علاقائی -