پی ٹی آئی کا لاڑکانہ میں جلسہ کا پروگرام، پیپلز پارٹی کو پریشانی لاحق ہوگئی

پی ٹی آئی کا لاڑکانہ میں جلسہ کا پروگرام، پیپلز پارٹی کو پریشانی لاحق ہوگئی
پی ٹی آئی کا لاڑکانہ میں جلسہ کا پروگرام، پیپلز پارٹی کو پریشانی لاحق ہوگئی

  

 اسلام آبا د(ویب ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے لاڑکانہ میں جلسہ کے پروگرام نے پیپلزپارٹی کو پریشانی سے دوچار کردیا ہے۔اخباری رپورٹ کے مطابق پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے حال ہی میں ایک مشترکہ دوست کے ذریعے عمران خان کو پیغام بھجوایا ہے کہ وہ لاڑکانہ میں جلسہ اور اسلام آباد میں جاری آزادی دھرنے سے اپنے خطاب میں پیپلزپارٹی اور اس کی قیادت کو زیادہ ہدف تنقید نہ بنائیں اور نرم رویہ اختیار کریں تاہم عمران خان نے آصف علی زرداری کی درخواست کو یہ کہتے ہوئے مسترد کردیا ہے کہ وہ کوئی روایتی سیاستدان نہیں ہیں جو ایک دوسرے کے مفادات کا تحفظ کرتے ہیں۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ وہ حکمرانوں کی کرپشن کا پرچار کرتے رہیں گے اور کرپشن کے ذریعے لوٹی ہوئی قومی دولت کو بیرونی بینکوں میں منتقل کرنے والوں کو بے نقاب کرتے رہیں گے۔ ذرائع کے مطابق عمران نے مذکورہ دوست کی جانب سے آصف زرداری سے ٹیلی فون پر گفتگو اور سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کرنے کی تجویز کو بھی مسترد کردیا ہے۔ واضح رہے کہ پی ٹی آئی نے 21 نومبر کو بھٹو خاندان کے آبائی شہر لاڑکانہ میں جلسہ کا اعلان کررکھا ہے اور اسکا دعویٰ ہے کہ یہ جلسہ لاڑکانہ کی تاریخ کا سب سے بڑا جلسہ ہوگا۔

مزید :

اسلام آباد -