اختیارات کی تقسیم نامنظور ، چیئر مین سراپا احتجاج بن گئے، میئر آفس کا گھیرا ؤ

اختیارات کی تقسیم نامنظور ، چیئر مین سراپا احتجاج بن گئے، میئر آفس کا گھیرا ...

لاہور (جنرل رپورٹر) حکومت کے اپنے ہی بلدیاتی نمائندے قیادت کیخلاف ایک بار پھر پھٹ پڑے، گزشتہ روز یونین کونسل کے چیئرمینوں کے ایک گروپ نے میئر آفس کا گھیراؤ کیا اور نعرے بازی کی چیئرمینوں نے وائس چیئرمینوں کو دئیے جانے والے اختیارات کا فیصلہ مسترد کر دیا ۔ چیئر مین اتحاد کے سربراہ سہیل بٹ نے کہا کہ پرویز مشرف کا پچھلا بلدیاتی نظام بہتر فعال تھا، اختیارات چھیننے کی کوشش ناکام بنا دیں گے۔لاہور کی مختلف یونین کونسلز کے چیئرمین ایک بار پھر حقوق کے معاملے پر اْٹھ کھڑے ہوئے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ 2013 کے بلدیاتی ایکٹ کی خلاف ورزی کی جا رہی ہے، اْن کے اختیارات چھین کر وائس چیئرمین کو دینے کی کوشش کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ناراض بلدیاتی نمائندوں کو لارڈ مئیر لاہور جب مذاکرات کے لئے ہال میں لے کر گئے تو وہاں بھی چیئرمین باز نہ آئے اور نعرے لگاتے رہے۔بلدیاتی نمائندوں کا کہنا تھا کہ کسی بھی جماعت میں بلدیاتی نظام ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے، اگر مسلم لیگ (ن) خود کو مزید مضبوط کرنا چاہتی ہے تو بلدیاتی نظام کو مکمل فعال کرے۔ مظاہرین نے نواز شریف ،شہباز شریف اور حمزہ شہباز کے حق میں نعرے بازی کی جبکہ میئر لاہو ر کے خلاف نعرے بازی سہیل بٹ نے خود کروائی جبکہ وہ میئر کے کمرے میں بھی نعرے بازی کرواتے رہے ۔انہوں نے کہا کے وائس چیئرمین کو زون کا ممبر بنایا گیا یا سائننگ ،سٹریٹ لائٹس اور ترقیاتی کاموں کا اختیار دیا گیا تو میئر کے ایوان کو نہیں چلنے دیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1