نواز شریف کا وطن واپسی پر شاندار استقبال ، احتساب عدالت میں آج پیش ہونگے

نواز شریف کا وطن واپسی پر شاندار استقبال ، احتساب عدالت میں آج پیش ہونگے

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،آن لائن)مسلم لیگ (ن)کے صدر وسابق وزیراعظم میاں نواز شریف لندن سے واپس اسلام آباد پہنچ گئے جہاں ان کا شاندار استقبال کیا گیا ،آج احتساب عدالت میں پیش ہوں گے ۔تفصیلات کے مطابق قومی ایئر لائن کی فلائٹ نمبر پی کے 786نواز شریف کو لے کر اسلام آباد کے بینظیر انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر پہنچی جہاں ان کے استقبال کیلئے لیگی رہنماؤں سمیت پارٹی کارکنوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔لیگی قیادت نے نواز شریف کا ایئرپورٹ پر استقبال کیا جبکہ سابق وزیر اعظم نے اپنے استقبال کیلئے آنے والے رہنماؤں سے مصافحہ بھی کیا۔بعدازاں نواز شریف قافلے کی صورت میں پنجاب ہاؤس روانہ ہوئے جبکہ وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق، پارٹی رہنما آصف کرمانی اور پارٹی کے سیکرٹری اطلاعات پرویز رشید سمیت دیگر رہنما بھی ان کے ہمراہ تھے ۔سابق وزیراعظم نوازشریف کے زیرصدارت پنجاب ہاؤس میں مسلم لیگ کے مشاورتی اجلاس میں راجہ ظفرالحق،مشاہد اللہ،چودھری تنویر،پرویزرشید، سعدرفیق، زاہدحامد،انوشہ رحمان ، طارق فضل چودھری،طلال چودھری،امیرمقام شریک ہوئے، اجلاس میں ملکی سیاسی صورتحال اورآئندہ کی حکمت عملی پرمشاورت کی گئی اس کے علاوہ نوازشریف کیخلاف نیب ریفرنسزاوراحتساب عدالت میں پیشی پربات چیت ہوئی۔پارٹی رہنماؤں نے بیگم کلثوم نواز کی صحت سے متعلق دریافت کیا،اس موقع پر نوازشریف نے پارٹی رہنماؤں سے کہا کہ بیگم کلثوم نوازکوآپ کی دعاؤں کی ضرورت ہے،نواز شریف نے کہاکہ عوام 2018 ء میں ایک بار پھر مسلم لیگ (ن) پر اعتماد کا اظہار کریں گے۔انہوں نے کہاکہ ہم نے کوئی تصادم کی راہ اختیار نہیں کی بلکہ ہمارے ساتھ تصادم کیاگیا،سابق وزیراعظم نے کہاکہ کوئی بے اصولی کی نہ آئندہ ایسا کچھ کریں گے کیونکہ ہم اقتدار نہیں اقدار کی سیاست پر یقین رکھتے ہیں،نوازشریف نے کہا کہ میں مقدمات کا سامنے کرنے کیلئے ہی آیا ہوں، مقدمات سے گھبرانے والا نہیں۔ نوازشریف نے وزراء کو کسی بھی طور پر جذباتی ردعمل نہ دینے کی ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ یہ اصولی فیصلے کرنے کا وقت ہے، اصولوں پر کھڑے رہیں تو پھر دیکھیں ہمیں کون ہٹاتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ پارٹی فیصلوں کا اطلاق مجھ سمیت سب پر ہو گا جبکہ مائنس فارمولے کے حوالے سے کوئی ڈکٹیشن نہیں لی جائے گی۔دریں اثناء نیب کی ٹیم نے نوازشریف کے پاس آنے کیلئے پہلے ان کے وکلا سے رابطہ کیا اور وکلا کی جانب سے اجازت ملنے کے بعدنیب کی 5 رکنی ٹیم ڈپٹی ڈائریکٹر محبوب احمد کی سربراہی میں نوازشریف سے عدالتی سمن کی تعمیل کرانے کیلئے پنجاب ہاؤس اسلام آباد پہنچی جہاں ٹیم نے سابق وزیراعظم سے سمن کی تعمیل کرائی۔ذرائع کے مطابق نیب ٹیم نے سابق وزیراعظم نوازشریف سے تین سمن پر دستخط کرائے جبکہ نیب ٹیم نے طارق فضل چودھری سے 10لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکوں پر دستخط لیے۔دریں اثناء مسلم لیگ ن کے سینٹرمشاہد اللہ کا کہنا تھا نواز شریف نے عوامی مہم رابطہ کا فیصلہ پارٹی رہنماؤں کیسا تھ مشاورتی اجلاس میں کیا، عوامی رابطہ مہم کے سلسلے میں پہلا جلسہ ایبٹ آباد میں ہو گا جلسہ ممکنہ طور پر 12 نومبرکو ہو گا ۔تاہم جلسے کی حتمی تاریخ اور مہم کے شیڈول کا اعلان چند روز میں کر دیا جائے گا۔ سینیٹر مشاہد اللہ کے مطابق مشاورتی اجلاس میں سینئر رہنماؤں نے نواز شریف کو عوام میں جانے کا مشورہ دیاتھا ۔

نواز شریف

مزید : صفحہ اول